• 3 فروری, 2023

یک روزہ سالانہ اجتماع مجلس انصار اللہ گاتھن برگ

مجلس انصار اللہ گاتھن برگ کا ایک روزہ سالانہ اجتماع مؤرخہ 23؍اکتوبر بروز اتوار منعقد ہوا۔ محترم زعیم صاحب مجلس انصار اللہ گاتھن برگ نے اجتماع کے انتظامات کے لئے ایک کمیٹی تشکیل دی۔ مجلس عاملہ کے اجلاس میں اجتماع کے انتظامات کے حوالے سے تفصیلی غور کیا گیا۔ مکرم زعیم صاحب اور خاکسار نے اجتماع کے جملہ انتظامات کے حوالے سے منتظم صاحب طعام، منتظم صاحب علمی مقابلہ جات اور منتظم صاحب ورزشی مقابلہ جات کے ساتھ الگ الگ میٹنگز کیں اور تفصیل سے تمام امور کا جائزہ لیا۔

اجتماع کی حاضری کو بہتر بنانے کے لئے تمام انصار بھائیوں سے بذریعہ ٹیلی فون رابطہ کیا گیا اور انہیں درخواست کی گئی کہ وہ اپنی حاضری کو یقینی بنائیں۔ جن انصار سے فون پر بات نہ ہو سکی انہیں اجتماع میں شرکت کے حوالے سے میسج کیا گیا لیکن بہت افسوس سے کہنا پڑ رہا ہے کہ حاضری بہت کم رہی۔

23؍اکتوبر کو محترم انور رشید صاحب صدر مجلس انصار اللہ سویڈن نے مسجد ناصر گاتھن برگ میں اجتماع کا افتتاح فرمایا۔ پروگرام کا آغاز تلاوت قرآن کریم سے ہوا جو مکرم صلاح الدین یوسف صاحب نے کی۔ ازاں بعد صدر مجلس کے ہمراہ سب انصار نے عہد دہرایا جس کے بعد مکرم انوار الدین سعید صاحب نے حضرت مسیح موعود علیہ السلام کا منظوم کلام پیش کیا۔ صدر مجلس نے اپنے مختصر خطاب میں انصار بھائیوں کو اس طرف توجہ دلائی کہ اجتماع میں انصار کی حاضری بہت کم ہے۔ انتظامیہ اجتماع اور لوکل مجلس عاملہ کو اس کا جائزہ لینا چاہئے اور حاضری میں کمی کی وجوہات تلاش کر کے آئندہ انہیں دور کرنے کی کوشش کرنی چاہئے۔ صدر محترم نے اس حوالے سے دعا کی طرف بھی توجہ دلائی اور کہا کہ ہمارے سب کام دعاؤں سے ہوتے ہیں۔ اس بات کا بھی جائزہ لیں کہ کیا آپ لوگ اجتماع کی کامیابی کے لئے دعا کرتے رہے ہیں اور کیا آپ نے آج صبح اپنے اجتماع کی کامیابی کے لئے دعا کی تھی یا نہیں؟

صدر محترم نے فرمایا کہ ہمیں اپنی کمزوریوں کا جائزہ لینا چاہئے اور ان کو دور کرنے کی بھرپور کوشش کرنی چاہئے۔ مکرم زعیم صاحب نے اجتماع کے پروگرام کے بارے میں بتایا کہ اب ورزشی مقابلہ جات منعقد ہوں گے۔ اس کے بعد کھانا پیش کیا جائے گا اور کھانے کے بعد نماز ظہر وعصر ادا کی جائے گی اور پھر علمی مقابلہ جات کروائے جائیں گے۔

ورزشی مقابلہ جات میں ٹیبل ٹینس، بال پھینکنا اور مشاہدہ معائنہ شامل تھے۔ انصار بھائیوں نے ان مقابلوں میں شوق اور دلچسپی سے حصہ لیا انتظامیہ کی طرف سے انصار کے لئے فروٹس کا بھی انتظام کیا گیا تھا۔ انصار کھیلوں کے ساتھ ساتھ فروٹس سے بھی لطف اندوز ہوتے رہے۔

کھیلوں کے اختتام پر انصار کی خدمت میں پر تکلف کھانا پیش کیا گیا اور اس کے بعد نمازیں ادا کی گئیں اور پھر علمی مقابلہ جات کا آغاز ہوگیا۔ ان مقابلوں میں تلاوت قرآن کریم، نظم اور حفظ قرآن کے مقابلہ جات شامل تھے۔ ان مقابلوں میں بھی انصار نے شوق اور دلچسپی سے حصہ لیا۔ اجتماع کا اختتامی اجلاس صدر مجلس کی صدارت میں شروع ہوا۔ مکرم فاضل احمد شمس صاحب نے تلاوت قرآن کریم کی۔ پھر صدر مجلس کے ساتھ انصار نے عہد دہرایا۔ نظم مکرم مرزا بشارت احمد صاحب نے پیش کی۔ مکرم زعیم صاحب نے اجتماع کی مختصر سی رپورٹ پیش کی جس کے بعد صدر مجلس نے اپنے اختتامی خطاب میں بانی مجلس انصار اللہ حضرت مصلح موعود رضی اللہ تعالیٰ عنہ کے 1940ء کے ایک ارشاد کے حوالے سے انصار کو توجہ دلائی کہ ہر ناصر روزانہ کم از کم آدھا گھنٹہ اپنی تنظیم انصار اللہ کو دے۔ صدر مجلس نے فرمایا کہ حضور کے اس ارشاد کو ہر ناصر اپنا لائحہ عمل بنا لے اور پھر دیکھے کہ خود اس کی ذاتی زندگی میں کیسا مثبت انقلاب آتا ہے اور اسی طرح مجلس کے کاموں میں بھی کیسی بہتری آنی شروع ہوتی ہے۔

اجتماع میں کمزور حاضری کی طرف توجہ دلاتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اجتماع کے انعقاد سے ہم پر یہ تو واضح ہو گیا کہ ہماری پوزیشن کیا ہے اور یہ کہ ہم کہاں کھڑے ہیں۔ ان تمام انصار کو فون کریں جو اجتماع میں شامل نہیں ہوئے اور انہیں درخواست کریں کہ مرکزی اجتماع 12-13؍نومبر میں ضرور شرکت کریں۔ یاددہانی کا سلسلہ جاری رکھیں تاکہ مرکزی اجتماع میں ہماری حاضری بہتر ہو سکے۔

آخر میں صدر مجلس نے دعا کروائی اور ہمارا اجتماع بخیر و خوبی اختتام پذیر ہوا۔ اَلْحَمْدُ لِلّٰہِ

(رپورٹ: چوہدری عطاء الرحمان محمود۔ منتظم اعلیٰ سالانہ اجتماع)

پچھلا پڑھیں

انڈیکس مضامین نومبر 2022ء الفضل آن لائن لندن

اگلا پڑھیں

ارشاد باری تعالی