• 29 ستمبر, 2020

پاک محمدؐ مصطفیٰ نبیوں کا سردار

جب وقت مصائب کی صورت اک بندے کو دکھلاتا ہے
جب تاریکی چھا جاتی ہے غم کا بادل گِھر آتا ہے

ہر گام پہ پاؤں پھسلتے ہیں آفات کے جھکڑ چلتے ہیں
جب صبر کا دامن ہاتھوں سے رہ رہ کر چھوٹا جاتا ہے

جب آنکھیں بھر بھر آتی ہیں اُمیدیں ڈوبی جاتی ہیں
جب یاس کا دریا چڑھتا ہے دل اس میں غوطے کھاتا ہے

جب ناؤ بھنْور میں گھرتی ہے جب موت نظر میں پھرتی ہے
جب حیلے سب ہو چکتے ہیں انساں بے بس ہو جاتا ہے

جب دم سینے میں گھُٹتا ہے جب دل میں ہوکیں اٹھتی ہیں
جب جینا کڑوا لگتا ہے، جب مرنا دل کو بھاتا ہے

جب بڑے بڑے جی چھوڑتے ہیں جاں دینے کوسرپھوڑتے ہیں
اس وقت بس ایک ’’مسلماں‘‘ ہے جو صبر کی شان دکھاتاہے

یہ برکت سب ’’اسلام‘‘ کی ہے تعلیم اس رحمتِ عام کی ہے
جو ’’نسخۂ تسکیں‘‘ وہ لایا دل مسلم کا ٹھیراتا ہے

بے آس کی آس بن جاتا ہے

بھیج درود اس محسن پر تو دن میں سو سو بار
پاک محمدؐ مصطفی نبیوں کا سردار

(درعدن ایڈیشن2008ء صفحہ14)

پچھلا پڑھیں

الفضل آن لائن 7 ستمبر 2020

اگلا پڑھیں

الفضل آن لائن 8 ستمبر 2020