• 29 ستمبر, 2020

کفران کیوں ہے نعمتِ ربِ جلیل سے

جلوہ دکھا دیا ہے جنابِ مثیل کا
کس منہ سے شکر ادا ہو خدائے جلیل کا

اے منکر پیام سروش و ندائے حق
کچھ تو خیال چاہیے یوم ثقیل کا

کیوں منقبض ہے مژدۂ جاء المسیح سے
کفران کیوں ہے نعمتِ ربِ جلیل سے

وہ ہیں اگر کثیرتو ہوں مطمئن ہوں میں
حامی قوی ہے اپنے گروۂِ قلیل کا

اس کو جلائے آتشِ نمرود یاں محال
پروانہ ہو جو شمع دعائے خلیل کا

فرعونیوں کے ظلم وستم سے ہو کیا ہراس
احوال آئینہ ہے خداوندِ نیل کا

راہِ وفا میں جس نے جھیلی ہوں سختیاں
وہ مستحق نہیں کسی اجرِ جزیل کا

کرنا ہے جو بس آپ اسے کر دکھائیے
اے مہربان وقت نہیں قال وقیل کا

مختاؔر اٹھارہا ہوں وہ صدمے کہ الاماں
دے حوصلہ خدا مجھے صبرِ جمیل کا

(حیات حضرت مختار صفحہ310)
(حضرت حافظ سید مختار احمد مختار ؔشاہجہانپوری صاحبؓ)

پچھلا پڑھیں

الفضل آن لائن 15 ستمبر 2020

اگلا پڑھیں

الفضل آن لائن 16 ستمبر 2020