• 6 اگست, 2021

نہر عرفان

ہے جاری الفضل اُنیس سو تیرہ سے‘ اور اب تک بحال دیکھو
رحیم و رحماںکا ہے یہ احساںکمال دیکھوجمال دیکھو
ہواہےآن لائن اب تو جاری خوشی سےسب ہیں نہال دیکھو
جونہرعرفان بند کی تھی اب اس کی تیزی ‘ اُچھال دیکھو
ہؤا ہے آن لائن اب توجاری خوشی سے سب ہیں نہال دیکھو
انوکھی سج دھج نکھار دیکھو اب اس کا حسن و جمال دیکھو
بہت تھیں پھیکی سی میری صبحیں نظر نہ آتا تھا جب یہ پرچہ
میں اس کی بندش سے مضطرب تھی بہت تھا حزن و ملال دیکھو
چھڑا دئے ہیں فضول دنیا کے جھوٹے اخبار اور رسالے
ہر ایک دل میں ہے اس کی چاہت یہی ہے اس کا کمال دیکھو
یہ دور کہف و رقیم جیسا ہمیں فلک پر اڑا رہا ہے
جہاں میں ہرگز نہیں ملے گی کوئی بھی ایسی مثال دیکھو
ہمارا مولا بہت تواناقدیروقادرہےمقتدر ہے
ہمیں بچاتا ہے دشمنوں سے بنا ہواہے وہ ڈھال دیکھو
شرارے شر کے پڑےپلٹ کرانہی پہ جو ہیں ہمارے بد خواہ
نہیں مناسب تکبر اتنااب اس کا قہروجلال دیکھو
ہوئے ہیں ظلمت کے ایسے رسیا کہ آنکھیں اپنی ہی پھوڑ لی ہیں
خود اپنی پستی سے بے خبر ہیںہوا ہے کیسا زوال دیکھو
دلوں کے ایماں پہ فیصلے اب ہوا کریں گے زمین پر ہی
خدا کے بندے خدا بنے ہیں یہ ان کی جرات مجال دیکھو
وطن سے لگتا تھا خط ہے آیا مرےپیاروں کی خیر لے کر
بہت مبارک ہو اس کی آمد ہوئے ہیں سب ہی نہال دیکھو

(امۃ الباری ناصر۔امریکہ)

پچھلا پڑھیں

الفضل آن لائن 17 جون 2021

اگلا پڑھیں

الفضل آن لائن 18 جون 2021