• 27 فروری, 2021

شمع ہاتھوں میں ہے خلافت کی

شمع ہاتھوں میں ہے خلافت کی
راہ ہم نے چنی صداقت کی
تو نے رستہ چنا اندھیروں کا
ہم نے پائی ضیاء خلافت کی
میں فسانہ نہیں ہوں دنیا کا
اک کہانی ہوں میں حقیقت کی
کیا بتاؤں میں آج کا ملاں
توڑ دی ہیں حدیں عداوت کی
بم دھماکوں سے کیسے مل جائے
بات کرتے ہیں کیسے جنت کی
میرا چرچا ہے سارے عالم میں
خوشبو پھیلی ہے ایسی بیعت کی
ڈال دے اے خدا تو جھولی میں
وہ جو دولت ہے اک اطاعت کی
عشق پھولوں سے ہے مگر زاہد
ہم نے کانٹوں سے بھی محبت کی

(سید طاہر احمد زاہد)

پچھلا پڑھیں

الفضل آن لائن 18 فروری 2021

اگلا پڑھیں

الفضل آن لائن 19 فروری 2021