• 20 جون, 2021

خلافت

خُدا ظاہر ہوا پھر سے لگی بجنے وہ شہنائی
سجا کر رَتھ محمد کی مسیح کی ہے برات آئی
خلافت پھر ہوئی تازہ بڑھی گُلشن کی رَعنائی
خِزاں رُخصت ہوئی اسلام پر پھر سے بہار آئی
بڑا احسان ہے ربّ کا ہوئی جاری خلافت پھر
چھٹے ہیں خوف کے بادل جواں رُت امْن کی آئی
بُہت اب ہو رہے باہم یہاں اِک ہاتھ پر دیکھو
جو تھی بے چین جاں پہلے ہے اُس کی جاں میں جاں آئی
رہا نا گورا یا کالا نہ دیسی یا نہ پردیسی
مِٹا ہے فرقِ غیر اِن میں بنیں ہیں سب کےسب بھائی
جہاں ہم ہوں خلیفہ بھی ہمارے پاس ہوتا ہے
بنایا کام یہ ڈِش نے اُمیدِ وَصل بَر آئی
ہوئے سو سال سے اوپر خلافت پر سُنو طارقؔ
خداکی حمدمیں گائیں خلافت جُوبلی پائی

(کلام۔ طارق بشیر ملک۔سڈنی آسٹریلیا 15 دسمبر 2007 صد سالہ جوبلی کے موقع پر)

پچھلا پڑھیں

الفضل آن لائن 26 مئی 2021

اگلا پڑھیں

الفضل آن لائن 27 مئی 2021