• 19 جون, 2024

کالمار (سویڈن) میں نئے جماعتی مرکز کا قیام

سویڈن ایک سکینڈے نیوین/ نارڈک ملک ہےجو یورپ کے شمال میں واقع ہے۔اس کے مغرب اور شمال میں ناروے،مشرق میں فن لینڈ ہے اور جنوب مغرب میں ایک پل اور سرنگ کے ذریعہ ڈنمارک سے جڑا ہوا ہے۔ سویڈن کی کل آبادی 10.2 ملین ہے۔

1976ء تک سویڈن میں کوئی باقاعدہ مسجد موجود نہ تھی۔جماعت احمدیہ کو 1976ء میں گوتھن برگ میں خداتعالیٰ کے فضل سے پہلی باقاعدہ مسجد کے قیام کی توفیق ملی۔

سویڈن پہلا نارڈک ملک تھا جہاں احمدی مشنری کو بھیجا گیا۔ 1935ء میں حضرت خلیفة المسیح الثانیؓ نے حضرت مولوی غلام احمد بشیر صاحب (مشنری ہالینڈ )کو سویڈن اس غرض سے بھیجا تاکہ یہاں ایک باقاعدہ مشن کے قیام کا جائزہ لیا جائے۔

جون 1956ءکو حضرت خلیفة المسیح الثانیؓ نے کمال یوسف صاحب کو پہلے مشنری کے طور پر سویڈن بھیجا۔آپ کی ذمہ داریوں میں ناروے اور ڈنمارک بھی شامل تھا۔

پہلا شخص جس نے احمدیت قبول کی وہ Gunnar Erikssonتھے۔اس وقت وہ ایک نوجوان تھے اور ان کا اسلامی نام سیف الاسلام محمود تجویز کیا گیا۔وہ ایک پر عزم اور فعال نوجوان تھے۔جنہوں نے جماعت کے لیے بہت کام کیا۔

حضرت خلیفۃ المسیح الثالث رحمہ اللہ نے 1975ء میں اس مسجد کا سنگ بنیاد رکھا۔ حضرت خلیفۃ المسیح الثالثؒ نے اس مسجد کا نام مسجد ناصر عطا فرمایا۔ یہ مسجد 1976ء میں مکمل ہوئی۔ اسی سال یعنی 1976ء میں حضرت خلیفة المسیح الثالثؒ نے مسجد ناصر کا افتتاح فرمایا۔یہ مسجد گوتھن برگ کے علاقہ Högsbohöjdمیں قائم ہوئی۔چند ہی سال میں یہ مسجد جماعت کی ضروریات کے لیے چھوٹی پڑ گئی اور 2001ء میں اسی مقام پر ایک کشادہ اور نئی مسجد کا قیام ہوا۔حضرت خلیفۃ المسیح الخامس ایدہ اللہ تعالیٰ کے 2005ء میں سویڈن کے دورہ کے دوران ایک تقریب مسجد کے افتتاح کے حوالے سے رکھی گئی تھی جس میں حضور انور ایدہ اللہ تعالیٰ نے رسمی طور پر مسجد کے افتتاح کا اعلان فرمایا۔سال 2016ء میں سویڈن کو اپنی دوسری مسجد کی تعمیر کی توفیق ملی جو کہ مالمو میں تعمیر کی گئی۔ حضرت خلیفۃ المسیح الخامس ایدہ اللہ تعالیٰ بنصرہ العزیز نے ازراہ شفقت مئی 2016ء میں اس مسجد کا افتتاح فرمایا۔ دوسری دو جماعتوں سٹاک ہالم اور لولیو میں بھی مرکز تبلیغ موجود ہیں۔ سویڈن میں پانچویں جماعت کالمار میں ہے۔ اس جماعت کا قیام 1986ء میں ہوا۔کالمار جماعت کو یہ سعادت حاصل ہے کہ حضرت خلیفۃ المسیح الرابع رحمہ اللہ نے 1989ء اور 1994ء میں دو دفعہ کالمار کا وزٹ فرمایا۔ کالمارمیں بعض دوستوں کے گھروں میں نمازوں کا اہتمام ہوتا رہا ہے۔ ایک لمبے عرصے سے یہاں باقاعدہ مرکز تبلیغ کے قیام کی ضرورت محسوس کی جارہی تھی اور اس سلسلہ میں کوششیں بھی جاری تھیں۔ جماعت سویڈن کوگزشتہ سال کے آخر میں حضور انور ایدہ اللہ تعالیٰ بنصرہ العزیز کی ازراہ شفقت اجازت سے کالمار میں ایک بہت ہی مناسب عمارت بطور مرکز تبلیغ خریدنے کی توفیق ملی۔ الحمد للّٰہ علی ذالک۔ حضور انور ایدہ اللہ نے ازراہ شفقت اس مرکز تبلیغ کا نام بیت الاحسان عطا فرمایا۔ عمارت خریدنے کے بعد مقامی جماعت کے ممبران مردو خواتین نے انتھک محنت سے اس عمارت کی تزئین و آرائش کےلئے کام کیا۔ اس عمار ت کے دو حصے ہیں ایک گراؤنڈ فلور ہے اور اس کے ساتھ بیسمنٹ ہے۔ ان دونوں حصوں میں نماز پڑھنے کےلئے جگہ کے علاوہ آفسز، گیسٹ رومز اور نوجوانوں کے لئے ٹیبل ٹینس کا بھی انتظام موجود ہے۔

حضور انور ایدہ اللہ کی اجازت سے اس مرکز تبلیغ کے افتتاح کےلئے موٴرخہ 7؍ جنوری 2023ء کا دن مقرر ہوا۔ اس افتتاحی پروگرام میں تقریباً 75 افراد شامل ہوئے۔ لوکل جماعت کے ممبران کے علاوہ نیشنل عاملہ ممبران، لوکل جماعتوں کے صدران، مبلغین کرام، صدران تنظیم اور ان کے نمائندگان بھی اس بابرکت تقریب میں شامل ہوئے۔

موٴرخہ 7؍ جنوری 2023ء کو بعد نماز ظہر و عصر محترم وسیم ظفر صاحب امیر جماعت سویڈن کی صدارت میں اس بابرکت تقریب کا آغاز ہوا۔ تلاوت قرآن کریم کی سعادت عزیزم شاذب شاہد صاحب قائد مجلس کالمار کے حصے میں آئی۔ نظم مکرم یوسف صلاح الدین صاحب نے پیش کی۔ مکرم ملک ناصر احمد صاحب صدر جماعت کالمار نے تمام شاملین کو خوش آمدید کہا۔آپ نے اس مرکز تبلیغ کی تزئین و آرائش میں حصہ لینے والے احباب و خواتین کا شکریہ ادا کیا اور حضور انور ایدہ اللہ کے اقتباسات کی روشنی میں مسجد کو آباد کرنے کی طرف توجہ دلائی۔ اس کے بعد عزیزم فارس شاہد اور عزیزم یاسر احمد نے ترانہ پیش کیا۔ مکرم آغا یحییٰ خان صاحب مبلغ انچارج سویڈن نے اپنے خطاب میں سورۃ توبہ کی درج ذیل آیت تلاوت کی۔

اِنَّمَا یَعۡمُرُ مَسٰجِدَ اللّٰہِ مَنۡ اٰمَنَ بِاللّٰہِ وَالۡیَوۡمِ الۡاٰخِرِ وَاَقَامَ الصَّلٰوۃَ وَاٰتَی الزَّکٰوۃَ وَلَمۡ یَخۡشَ اِلَّا اللّٰہَ فَعَسٰۤی اُولٰٓئِکَ اَنۡ یَّکُوۡنُوۡا مِنَ الۡمُہۡتَدِیۡنَ ﴿۱۸﴾

( التوبہ : 18)

اس آیت میں اللہ تعالیٰ فرماتا ہے کہ۔ اللہ کی مساجد تو وہی آباد کرتا ہے جو اللہ پر ایمان لائے اور یومِ آخرت پر اور نماز قائم کرے اور زکوٰۃ دے اور اللہ کے سوا کسی سے خوف نہ کھائے۔ پس قریب ہے کہ یہ لوگ ہدایت یافتہ لوگوں میں شمار کئے جائیں۔

آپ نے بتایا کہ یہ مرکز تبلیغ مسجد کا قائمقام ہے جب تک یہاں باقاعدہ مسجد نہیں بنتی اسی جگہ نمازوں کی ادائیگی کی جائے گی۔آپ نے فرمایا کہ اللہ تعالیٰ نے قرآن کریم میں مساجد بنانے والوں کو اپنی رضا حاصل کرنے والے قرار دیا ہے اور اس آیت میں مساجد کی تعمیر کرنے والوں کی پانچ نشانیاں بیان فرمائی ہیں۔ ان پانچ نشاینوں کو ہمیں یاد رکھنا چاہئے اور پھر ہم سب کو اپنا جائزہ بھی لینا چاہئے اوران کی روشنی میں اپنے مستقبل کے پلان کو بھی درست کرنا چاہئے۔

آپ نے حضرت خلیفۃ المسیح الخامس ایدہ اللہ کا ایک مسجد کے موقع پر بیان فرمودہ ارشاد بھی حاضرین کے سامنے پیش کیا جس میں حضور انور ایدہ اللہ فرماتے ہیں:
ہر مسجد جو ہم بناتے ہیں ہمارے لئے ایک بہت بڑا چیلنج لے کر آتی ہے کہ اپنی حالتوں کو بھی درست کرنا ہے، اللہ تعالیٰ سے تعلق میں بھی اور عملی نمونے میں بھی اپنی حالتیں بہتر کرنی ہیں اور تبلیغ کے میدان بھی کھولنے ہیں، صرف اتنی بات پر خوش ہو کر نہیں بیٹھ جانا کہ ہم نے مسجد بنا لی۔ ہم نے اس زمانے میں آنحضرت صلی اللہ علیہ وسلم کے اس غلامِ صادق کو مانا ہے جس نے اسلام کا احیائے نو کرنا تھا، نئی زندگی شروع کرنی تھی۔ آپ نے ان تمام غلط فہمیوں کو دنیا کے دماغوں سے نکالنا تھا جو اسلام کے متعلق پیدا ہو چکی ہیں چاہے وہ غیر مسلموں کے ذریعہ سے پیدا ہوئی ہوں یا نام نہاد علماء کی غلط تفسیروں سے پیدا ہوئی ہوں اور اب یہ کام ہمارا، حضرت مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام کے ماننے والوں کا ہے کہ اس لحاظ سے اپنی تمام تر کوششوں اور صلاحیتوں کو بروئے کار لائیں، اپنی حالتوں اور عبادتوں کو ان معیاروں تک لے کر جائیں جو اللہ تعالیٰ کے نزدیک قابل قبول ہیں، جن کے بارے میں ہمیں حضرت مسیح موعود علیہ الصلوٰۃ والسلام نے بار بار توجہ دلائی ہے۔

(خطبہ جمعہ 19؍ اکتوبر 2018ء)

اختتامی خطاب میں محترم وسیم ظفر صاحب امیر جماعت سویڈن نے احباب جماعت کو مخاطب کرتے ہوئے فرمایا کہ انہیں مرکز تبلیغ کے حصول پر خدا تعالیٰ کا شکر ادا کرنا چاہئے اور شکرانے کے طور پر اس مرکز تبلیغ کا بہترین استعمال کریں۔ یہ مرکز تبلیغ کالمار میں ایک باقاعدہ مسجد کے قیام کی طرف ایک قدم ہے۔ اس منزل کے حصول کےلئے احباب جماعت کو خود بھی اسلام کی سچی تعلیمات پر عمل کرنا ہو گا اور اسلام کا پیغام اس مرکز تبلیغ سے اس علاقے میں پھیلانا ہوگا۔ پروگرام کے آخر پر محترم امیر صاحب نے دعا کروائی۔ دعا کے بعد سب احباب کی خدمت میں پرلطف کھانا تقسیم کیا گیا۔ ایم ٹی اے سویڈن کی ٹیم نے اس پروگرام کی ویڈیو گرافی اور فوٹو گرافی کی۔ اسی طرح اس نئے مرکز تبلیغ میں ساؤنڈ سسٹم بھی ایم ٹی اے کی ٹیم نے نصب کیا۔

قارئین الفضل کی خدمت میں دعا کی عاجزانہ درخواست ہے کہ اللہ تعالیٰ اپنے فضل سے احباب جماعت کو اس مرکز تبلیغ کو عبادت گزاروں سے بھرنے کی توفیق عطا فرمائے اور اس مرکز تبلیغ سے اسلام احمدیت کا پیغام جو کہ امن اور محبت کا پیغام ہے سارے علاقے میں پھیل جائے۔ آمین

(رپورٹ: رضوان احمد افضل۔ نمائندہ الفضل آن لائن سویڈن)

پچھلا پڑھیں

الفضل آن لائن 27 فروری 2023

اگلا پڑھیں

ارشاد باری تعالی