• 6 اگست, 2021

مسجد ناصر سرینام کے 50سالہ جشن پرافطار کا اہتمام

مسجد ناصرسرینام کے 50سالہ جشن پرافطار کا اہتمام
الیکٹرانک اور پرنٹ میڈیا میں جماعتی خبروں کی اشاعت

روحانی بہار کا موسم رمضان اپنی تمام تر حسن و خوبی کے ساتھ اپریل کے دوسرے ہفتے میں جنوبی امریکہ کے ممالک پر سایہ فگن ہوا۔امسال یہ ماہِ مقدس اس لئے بھی یاد گار تھا کہ جماعت سُرینام کی پہلی مسجد ناصر کی تعمیر کے پچاس سال مکمل ہو رہے تھے۔

بدقسمتی سے اپریل کے آغاز سے ہی کرونا کی تیسری لہر نے اس ملک میں اپنے پنجے گاڑ دیئے تھے، اس لئے مختلف پابندیوں کے ساتھ اس ماہ مبارک کا آغاز ہوا۔

خدا تعالیٰ کے فضل و احسان سےگذشتہ 19سال سے جماعت احمدیہ سُرینام کو رمضان المبارک کے مقدس مہینہ میں روزانہ پندرہ منٹ کا ایک ٹی وی پروگرام پیش کرنے کی توفیق مل رہی ہے۔ اور اس ملک کے ٹی وی چینلز مذہبی رواداری کی عمدہ مثال قائم کرتے ہوئے ان پروگرامز کے لئے حسب منشا وقت بھی دیتے ہیں اور انتہائی مناسب معاوضہ بھی لیتے ہیں۔ امسال بھی ہم نے مارچ کے شروع میں مختلف ٹی وی چینلز سے رابطے کئے۔ آجکل سُرینام میں ٹی وی پر پندرہ منٹ وقت کا کمرشل ریٹ 275سے 300سُرینامی ڈالر ہے، لیکن ملک کے معروف ٹی وی چینل (T.B.N.) ’’تری شول براڈکاسٹنگ نیٹ ورک‘‘ نے ہمیں صرف 50سُرینامی ڈالر فی پروگرام معاوضے پر شام چھ بجے کا وقت دینے کی حامی بھری۔ چنانچہ ہم نے پروگرامز کی تیاری اور ترتیب و تدوین کا کام شروع کیا اور بفضل خدا مورخہ 12اپریل کو پہلا پروگرام ’’رویت ہلال‘‘ کے حوالے سے نشر ہوا۔

مسجد کی تزئین و آرائش

امسال جماعت کی مرکزی مسجد ناصر کے پچاس سال بھی اِسی بابرکت مہینے میں پورے ہورہے تھے ، اس لئے مسجد کی تزئین و آرائش کا کام بھی مارچ میں شروع کیا گیا۔ مسجد کو پینٹ کرنے کے لئے تقریباً چودہ میٹر بلند مچان یا آہنی ڈھانچا (Scaffolding) درکار تھا، اس مقصد کے لئے ہم نے مختلف جگہوں پر رابطہ کیا، تو آٹھ میٹر فریم کا یومیہ کرایہ 250سُرینامی ڈالر بتایا گیا۔ پھر ملک کی ایک معروف کمپنی کے مالک سے رابطہ کیا گیا، اور انہیں اپنی ضرورت سے آگاہ کیا گیا۔ باوجود اس کے وہ غیر مسلم ہیں انہوں نے کہا کہ مسجد کے کام کے لئے میں بلا معاوضہ آپ کو مچان فراہم کروں گا، اور جتنے دن چاہیں استعمال کریں۔ چنانچہ انہوں نے اپنا 15میٹر کا فریم اپنے ٹرک پر مسجد بجھوایا۔ جسے ہم نے دو ہفتے استعمال کیا، اور مسجد کے چاروں میناروں کے پینٹ کا کام مکمل ہونے کے بعد جماعت کی طرف سے شکریہ کے خط کے ساتھ انہیں سامان واپس بجھوایا۔

ماہِ مقدس کا آغاز

مؤرخہ 12اپریل2021ء بروزپیر پہلی تراویح ادا کی گئی، اور منگل 13اپریل کو سرینام میں مسلمانوں کی اکژیت نے پہلا روزہ رکھا۔ لیکن روزانہ شام کو لاک ڈاؤن کی وجہ سے مساجد میں تراویح کا انتظام نہیں ہو سکا، اور افراد جماعت کو گھروں میں نماز باجماعت اور نوافل کی ادائیگی کی تلقین کی گئی۔ خاکسار نے روزانہ رات نو بجے زوم پر درس کا سلسلہ شروع کیا، جس کے بعد سوالوجواب کا پروگرام بھی ہوتا رہا۔

جوبلی تقریبات

25اپریل 2021ء بروز اتوار مسجد ناصر کے افتتاح کو پچاس سال مکمل ہوئے۔ حسن اتفاق سے پچاس سال قبل 25اپریل 1971ءبھی اتوار کا دن تھا۔ اِس دن کو یادگار بنانے کے لئے خصوصی اہتمام کیا گیا۔ ملک میں کرونا کے مثبت کیسز میں مسلسل اضافے کے باعث میل جول کے قواعد مزید سخت کر دئے گئے تھے، اس لئے اس موقعہ پر انتہائی محدود پیمانے پر تقریب منعقد کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔مسجد کو رنگ برنگی جھنڈیوں سے سجایا گیا اور چراغاں کیا گیا۔مسجد کی تصویر سے مزین لوگو اور سووینیئر تیار کروایا گیا۔ چار وزراء اورچند دیگر مہمانوں کو پروگرام میں شمولیت کی دعوت دی گئی۔ مورخہ 25اپریل کو پہلی تقریب افطار کے وقت منعقد ہوئی جس میں تین وزراء اور چندافراد جماعت شامل ہوئے۔ معزز مہمانوں میں وزیر دفاع (Krishna Hussain Ali) محترمہ کرشنا حسین علی صاحبہ۔ منسٹرپبلک ورکس (Professor Dr. Riad Nurmohamed) پروفیسر ڈاکٹر ریاض نور محمد صاحب ۔لیبر، ملازمت اور نوجوانوں کے امور کی وزیر (Rishma Kuldipsingh) محترمہ ریشما کلدیپ سنگھ صاحبہ شامل ہیں۔ تینوں مہمانوں کو عشائیے کے بعدجماعتی کتب اور یادگاری سووینیئر پیش کئے گئے ۔مہمانوں کی طرف سے محترم پروفیسر ڈاکٹر ریاض نور محمد صاحب اور جماعت کی طرف سے خاکسار نے شاملین کا شکریہ ادا کیا۔

مؤرخہ 26اپریل کو دوسرے افطار میں وزیر داخلہ (Mr. Bronto Salam Somohardjo) مسٹر برونتو سلام سوموہارجو، وزارت داخلہ کے ڈائریکٹر (Mr. Mohamad Nasier Eskak) مسٹر محمد نصیر ایسکاک اور مجلس عاملہ کے چند ممبران شامل ہوئے۔ کھانے اور نماز مغرب کے بعد محترم صدر صاحب نے جماعت کا مختصر تعارف کروایا، اور مسجد کی تعمیر کی تاریخ بیان کی۔ وزیرداخلہ نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا۔ بعد ازاں ان مہمانوں کو بھی جماعتی لٹریچر اور سووینئیر پیش کیا گیا۔

جماعت سُرینام کے ابتدائی ممبران میں شامل محترم عبد المطلب محمود صاحب جو پچاس سال قبل مسجد کی افتتاحی تقریب میں بھی شامل تھے انہیں خاص طور پر اس تقریب میں مدعو کیا گیا، اور انہیں بھی سووینئیر پیش کیا گیا۔

ان تقاریب کے حوالے سے قابل ذکر بات یہ ہے کہ جب محترم ڈاکٹر ریاض نور محمد صاحب کو شمولیت کا دعوت نامہ بجھوایا گیا، تو انہوں نے اپنی اہلیہ کو رقم دے کر مسجد بجھوایا اور درخواست کی کہ اس پروگرام کا تمام خرچ وہ ادا کریں گے۔

اشاعت

مسجد کے پچاس سال کی تکمیل کو ہم نے اس طرح بھی یاد گار بنایا کہ 46صفحات پر مشتمل ’’نماز کی کتاب‘‘ تیار کی۔ جس میں عبادت کا فلسفہ، نماز کے احکام و مسائل، مسنون دعائیں،چند چھوٹی سورتیں شامل کرکے دیدہ زیب کور پیج کے ساتھ شائع کروائی گئی۔ اس کتاب کی اشاعت کاتمام خرچ سُرینام کے سب سے پہلے احمدی محترم عبد العزیز جمن بخش صاحب کے بچوں نے اپنے والدین کی طرف سے ادا کیا۔

میڈیا کوریج

خدا تعالیٰ کے فضل و احسان کے ساتھ اس موقعہ پر ہمیں بھر پور میڈیا کوریج ملی۔ سب سے پہلے ملک کے سب سے قدیم اخبار ’’دا وار تیڈ‘‘ (De Ware Tijd) نے مورخہ 25اپریل کو مسجد کی کلر تصویر کے ساتھ مفصّل رپورٹ شائع کی۔ اس خبر کو پانچ نیوز ویب سائٹس نے اپنے مرکزی صفحہ پر شیئر کیا۔

26اپریل کو ملک کے معروف اخبار ’’داخ بلاد سُرینام‘‘ (Dagblad SURINAME) نے فرنٹ پیچ پر مسجد کی کلر تصویر شائع کی اور اندر کے رنگین صفحہ 9پر پانچ تصاویر کے ساتھ تفصیلی خبر شائع کی۔

اِسی روز ایک اور روز نامہ ’’ٹائمز آف سُرینام‘‘ (Times of SURINAME) نے بھی صفحہ نمبر 4پر تین تصاویر کے ساتھ تفصیلی خبر شائع کی۔

ملک کی معروف نیوز ویب سائٹ ’’جی ایف سی نیوز‘‘ (GFC Nieuws) نے بھی مؤرخہ 26اپریل کو تصاویر کے ساتھ اپنے مرکزی صفحہ اور فیس بک پیج پرتفصیلی خبر شائع کی۔

حالات حاضرہ کے مقبول پروگرام ’’ٹی بی این پرائم الرٹ‘‘ کی ٹیم نے مسجد آکر محترم شمشیر علی صاحب صدر جماعت کا 15منٹ دورانیے کا انٹرویو کیا اور جو 26اپریل کی رات 8بجے ٹی وی پر نشر ہوا۔

رمضان پروگرامز

’’تری شول ٹی وی‘‘ پر روزانہ رمضان پروگرامز کا سلسلہ چاند رات تک جاری رہا۔ راپار براڈکاسٹنگ نیٹ ورک (RBN Ch.5) جہاں سے جماعت کا ہفتہ وار پروگرام نشر ہوتا ہے، اس چینل کو بھی پانچ پروگرام رمضان المبارک کے حوالے سے تیار کرکے دئیے گئے۔ امسال رویت ہلال، روزے کی اہمیت، فضیلت، برکات، روزے کے مسائل، سفر اور روزہ، روزہ رکھنے کی عمر، عورت اور روزہ، تلاوت قرآن مجید کی اہمیت وبرکات، اعتکاف کی اہمیت و فضیلت، لیلۃ القدر کی فضیلت اور اس کی تلاش کی سعی، صدقۃ الفطر کی اہمیت اور ادائیگی کا طریق، مسجد کا احترام، عیدالفطر اور سنت رسول ﷺ، ایسے موضوعات پر کل 36پروگرام پیش کئے گئے، جن پر 9گھنٹے وقت صرف ہوا۔

خدا تعالیٰ کے فضل سے بڑی تعداد میں اہل سرینام مسلم اور غیر مسلم افراد نے ہمارے پروگرام دیکھے، اور ان کے معیار کی تعریف کی۔ حسب روایت تمام پروگرامز کا خرچ افراد جماعت کی ڈونیشن سے پورا کیا گیا،اور خدا تعالیٰ کے فضل سے ممبران نے اس مقصد کے لئے بھر پور جذبے کے ساتھ قربانی کی۔ ہر سال خدا تعالیٰ کے فضل سے رمضان المبارک کے دوران نہ صرف ان مخصوص پروگرامز بلکہ سال بھر جاری رہنے والے ہفتہ وارٹی وی پروگرام کے لئے بھی کافی حد تک رقم جمع ہو جاتی ہے۔

مستحقین کی امداد

رمضان المبارک کے دوران ’’لائنز کلب سُرینام‘‘ کی انتظامیہ نے مسجد سے رابطہ کیا کہ ہم آپ کی جماعت کے توسط سے غربا کی مدد کرنا چاہتے ہیں، چنانچہ ہم نے آس پاس کے 15مستحق خاندانوں کی لسٹ انہیں بجھوا دی۔ مؤرخہ 26اپریل کی سہ پہر لائنز کلب کے ممبران نےمسجد میں اشیائے خورونوش کے یہ پیکٹس تقسیم کئے۔ اسی طرح جماعتی نظام کے تحت بھی اشیاء خورونوش کے 15پیکٹ غیر از جماعت مستحقین اور ضرورتمند افراد جماعت میں تقسیم کئے گئے، اور جماعت کے کچھ بچوں کے لئے کپڑوں کا انتظام کیا گیا۔

عید الفطر

سُرینام میں عیدین کے موقعہ پر عام تعطیل ہوتی ہے۔ امسال بھی 4مئی کو گورنمنٹ کی طرف سے 13مئی کو عید الفطر کے دن عام تعطیل کا اعلان کیا گیا، اور مجلس عاملہ نے افراد جماعت کی سہولت کو مدنظر رکھ کر چار مختلف جگہوں پر نماز عید ادا کرنے کا پروگرام ترتیب دیا، لیکن 10مئی کو ملک میں مکمل لاک داؤن کا اعلان کر دیا گیا، جس کی وجہ سےاس پروگرام پر عمل کرنا ممکن نہ رہا، اور افراد جماعت کو نماز عید پڑھانے کا طریق بتا کر اور خطبہ فراہم کر کے اپنے اہل خانہ کے ہمراہ نماز عید پڑھنے کی تلقین کی گئی۔ جس کے لئے ساڑھے نو بجے کا وقت مقرر کیا گیا، اور دن دس بجے خاکسار نے زوم کے ذریعہ عید کا خطبہ دیا، اور اجتماعی دعا کروائی۔

قارئین الفضل کی خدمت میں احباب جماعت سُرینام کے اموال میں برکت کیلئے دعا کی درخواست ہے۔

(رپورٹ: لئیق احمد مشاق مبلغ سلسلہ ونمائندہ روزنامہ الفضل سُرینام)

پچھلا پڑھیں

الفضل آن لائن 28 جون 2021

اگلا پڑھیں

الفضل آن لائن 29 جون 2021