• 24 جون, 2024

دعا کا تحفہ

صبح و شام کی دعا

حضرت عبد اللہؓ بن عمرؓبیان کرتے ہیں کہ رسول کریم صلی اللہ علیہ وسلم روزانہ صبح اور شام کچھ دُعائیہ کلمات ضرور پڑھتے تھے۔ اُن میں سے ایک دُعا یہ ہے:

اَللّٰھُمَّ اِنِّیْ اَسْاَلُکَ الْعَافِیَۃَ فِیْ الدُّنیَا وَالْآخِرَۃِ اَللّٰھُمَّ اِنِّیْ اَسْاَلُکَ الْعَفوَ وَالْعَافِیَۃَ فِیْ دِینِی وَدُنیَایَ،وَاَھْلِیْ وَمَالِیْ،اَللّٰھُمَّ اسْتُر عَوْرَاتِیْ،وَآمِنْ رَوْعَاتِیْ،اَللّٰھُمَّ احْفَظْنِیْ مِنْ بَیْنِ یَدَیَّ وَمِنْ خَلْفِیْ وَعَنْ یَمِیْنِیْ وَعَنْ شِمَالِیْ وَمِنْ فَوقِیْ، وَاَعُوذُ بِعَظْمَتِکَ اَنْ اُغتَالَ مِن تَحتِی۔

(ابو داؤدکتاب الادب)

ترجمہ: اے اللہ! مَیں تجھ سے دنیا اور آخرت میں عافیت کا طلبگار ہوں۔ مولیٰ! مَیں تجھ سے دین و دنیا،مال و گھر بار میں عفو اور عافیت کا خواستگار ہوں۔ اے اللہ! میری کمزوریاں ڈھانپ دے اور مجھے میرے خوفوں سے امن دے۔ اے اللہ! میرے آگے پیچھے اور میرے دائیں بائیں اورمیرے اوپر سے خود میری حفاظت فرما اور مَیں تیری عظمت کی پناہ چاہتا ہوں کہ مَیں نیچے کسی مخفی مصیبت کا شکار ہوں۔

(مناجات رسولؐ از خزینۃ الدعا مرتبہ علامہ ایچ ایم طارق ایڈیشن2014ء صفحہ113-112)

(مرسلہ: عائشہ چوہدری۔جرمنی)

پچھلا پڑھیں

خلاصہ خطبہ جمعہ فرمودہ 30؍دسمبر 2022ء

اگلا پڑھیں

الفضل آن لائن 2 جنوری 2023