• 15 اگست, 2022

امن کے عنوان پر برکینا فاسو میں تقاریر کے مقابلہ جات

امن کی تعلیم مذہب اسلام کا خاصہ ہے۔ اور آج کے دور میں جہاں ہر طرف افراتفری کا عالم ہے، انسانوں کے خون کی ندیاں بہائی جارہی ہیں وہاں امن کی راہوں کواستوار کرنا جماعتِ احمدیہ عالمگیر کا اولین فریضہ ہے۔برکینا فاسو میں جہاں جماعت احمدیہ تینکودگو لوگوں کو امام مہدی کے پیغام سے روشنا س کرانے میں کوشاں ہے وہاں اس ملک میں اسلام کے نام پر دہشت گردی کرنے والوں کو اسلام کا حقیقی پیغام یعنی امن کا پیغام دینے میں ہر ممکن کوشش میں مصروف ہے۔ اسی سلسلے کی ایک کڑی تینکودوگو کی تاریخ میں پہلی بار مقابلہ تقاریر بزبان فرنچ و انگریزی بعنوان امن کا انعقاد ہے۔ موٴرخہ 28 مئی 2022ء کو جماعتِ احمدیہ تینکودوگو نے اسکولوں اور کالجوں کے درمیان امن کے عنوان پر تین تقاریر کے مقابلہ جات کروائے۔ جن میں سے اسکول کی سطح پر بزبا ن فرینچ اور کالج کی سطح پر بزبان فرینچ اور بزبان انگریزی کے مقابلہ جات کا بھر پور رنگ میں انعقاد کیا گیا۔یہ مقابلہ جات کسی بھی رنگ میں ہونے والے تینکودوگو کی تاریخ میں پہلی با ر تقاریر کے مقابلہ جات تھے۔ چونکہ ایک نیا سلسلہ تھا جس سے طلبا شناسانہ تھے۔ اس لئے خاکسار کی سربراہی میں جماعت کا ایک وفد 20 اسکولوں اور کالجوں کو خود اس مقابلہ کی دعوت کے لئے پہنچا اور جماعت احمدیہ کا تعارف کرانے کے ساتھ ساتھ امن کے موضوع پر تقاریر کے مقابلہ کا بھر پور تعارف کروایا۔ اور مقابلہ جات میں تیاری کے لئے بعض تقاریر بھی خاکسار نے فرینچ اور انگریزی زبان میں فراہم کیں۔بفضل ِ خدا 12 اسکولوں اور کالجوں کے 27 طلبا نے بھرپور جوش وجذبہ کے ساتھ مقابلہ جات میں حصہ لیا۔ سامعین نے جماعتِ احمدیہ تینکودوگو کے امن کے پیغام کو وقت کی ضرورت قراردیتے ہوئے خوب سراہا۔ اور بعض نے آئندہ اپنے اداروں میں بھی ان مقابلہ جات کے انعقاد کے لئے کوشش کی یقین دہانی کروائی۔ آخر میں مقابلہ جات میں اول، دوم اور سوم آنے والے طلباوطالبات میں انعامات تقسیم کیے گئے۔ خداکے فضل سے ان مقابلہ جات میں جماعت احمدیہ کے اسکول کی دو طالبات (جن میں ایک احمدی طالبہ عزیز ہ نادیہ شامل ہیں) نے تقریربزبان فرینچ میں اسکول کی سطح پر دوسری اور تیسری پورزیشن حاصل کرکے جماعتِ احمدیہ کے اسکول کا نام روشن کیا۔ اللہ تعالیٰ یہ اعزاز مبارک کرے۔

(رپورٹ: مرزا عطاءالرؤف۔ مربی سلسلہ برکینا فاسو)

پچھلا پڑھیں

الفضل آن لائن 1 جولائی 2022

اگلا پڑھیں

ارشاد باری تعالیٰ