• 20 جون, 2021

سیرالیون کے کینیما ریجن میں مسجد کا بارکت افتتاح

محض اللہ تعالیٰ کے فضل سے احمدیہ مسلم جماعت سیرالیون کو مؤرخہ 7؍ اپریل 2021 کو کینیما شہر میں ایک مسجد کے افتتاح کی توفیق ملی۔ الحمدللہ

اس مسجد کا سنگِ بنیاد 2006 ء میں مکرم لطف الرحمٰن صاحب مرحوم ، سابق پرنسپل ناصر احمدیہ سیکنڈری سکول نے رکھا تھا (آپ 2006 ء کے جلسہ سالانہ پر بطور مرکزی مہمان تشریف لائے تھے)۔ اور اُس وقت کینیما ریجن کے مبلغ مکرم اقبال منیر صاحب کی نگرانی میں اس کی بنیادیں اور دیواریں تعمیر کی گئیں تھیں۔ مگر بعد میں بوجوہ اس کی تعمیر مکمل نہ ہو سکی۔

2017ء میں مکرم قاصد احمد وڑائچ صاحب، مربی سلسلہ ، کینیڈا سے وقفِ عارضی پر کینیما تشریف لائے اور واپس جانے پر انہوں نے اور ان کی فیملی نے اس مسجد کو مکمل کرنے کی خواہش کا اظہار کیا جسے حضورِ انور ایدہ اللہ تعالیٰ نے ازراہِ شفقت منظور فرمایا۔ مکرم قاصد وڑائچ صاحب کی درخواست پر حضورِ انور ایدہ اللہ نے 4 اینٹیں (ٹائلیں) دعا کرکے عطا کیں جن میں سے ایک اینٹ (ٹائل) اس مسجد کی بنیادوں میں لگائی گئی۔ ناصر احمدیہ سیکنڈری سکول کی طرف سے اس مسجد کی تعمیر کے لئے 49 ؍ ملین لیونز ادا کئے گئے اور مکرم قاصد وڑائچ صاحب کی فیملی نے 65؍ ملین لیونز کی رقم ادا کی۔
فجزاہم اللہ احسن الجزاء۔

مسجد کی تعمیر کی نگرانی کی سعادت مکرم منیر حسین صاحب کو حاصل ہوئی جو کینیما ریجن میں بطور مبلغ تعینات تھے اور افتتاحی تقریب و دیگر انتظامات کی سعادت مکرم محمد نعیم اظہر صاحب کو حاصل ہوئی جو اس وقت کینیما میں بطور ریجنل مبلغ خدمت کی تو فیق پارہے ہیں۔

یہ مسجد کینیما سے فری ٹاؤن جانے والی شاہراہ پر واقع ہے اور دور سے ہی ایک خوبصورت نظارہ پیش کرتی ہے۔ مسجد کا کل رقبہ پانچ ٹاؤن لاٹ ہے اور مسقف احاطہ 55 65 فٹ ہے اور اس میں قریبا 450 ؍ افراد نماز ادا کرسکتے ہیں۔مسجد کے مینارہ کی اونچائی 60 فٹ ہے۔

مؤرخہ 7 ؍ اپریل کو افتتاحی تقریب کا باقاعدہ آغاز دن ساڑھے گیارہ بجے مکرم محترم مولانا سعیدالرحمن صاحب امیر و مشنری انچارج سیرالیون کی صدارت میں تلاوت قرآن کریم سے ہوا۔جس کی سعاد ت حافظ اسداللہ وحید صاحب استاذ جامعۃ المبشرین سیرالیون کو حاصل ہوئی۔ مکرم اسماعیل کوروما صاحب استاذ ناصر احمدیہ سیکنڈری سکول نے قصیدہ یاعین فیض اللہ والعرفان پیش کیا۔ ریجنل صدر مکرم محمد شریف صاحب نے مہمانوں کا تعارف کروایا۔

مکرم امیر صاحب نے اپنے خطاب میں جماعت احمدیہ کا تعارف اور مسیح موعودؑ و مہدی معہود ؑ کے آنے کا مقصد بتایا کہ جماعت احمدیہ کا کام خلافتِ احمدیہ کے زیرِ سایہ دنیا میں اسلام کا امن اور بھائی چارے کو فروغ دینا اور لوگوں کو اسلام کی حقیقی تعلیم کی طرف بلانا ہے۔ آپ نے سیرالیون میں جماعت کے آغاز اور گذشتہ سوسال میں ہونے والی ترقیات کا ذکر کیا۔

اس کے بعد بعض مہمانوں کے طرف سے Goodwill Messages دئے گئے۔ پیراماؤنٹ چیف مکرم محمد بانیاں صاحب نائب ا میر دوم نے چیفوں کی طرف سےامیرصاحب اور جماعت کا شکریہ ادا کیا۔ گورنمنٹ ہائی سکول کے پرنسپل نے منسٹری آف ایجوکیشن کی طرف سے، مکرم مصطفیٰ سکائیکے صاحب نے لبنانی کمیونٹی کی طرف سے اور مسٹر محمد باہ صاحب انسپکٹر آف پولیس نے ڈی آئی جی کی طرف سے جماعت کو مبارکباد دی اور شکریہ ادا کیا؟

مکرم امیر صاحب نے باقاعدہ فیتہ کاٹ کر مسجد کا افتتاح فرمایا اور نمازِ ظہر باجماعت ادا کی گئی جس کے بعد مہمانوں کی خدمت میں کھانا پیش کیا گیا۔

اس بابرکت تقریب میں ایک پیراماؤنٹ چیف، ڈسٹرکٹ امام اور ان کی عاملہ کے تین ممبر، چیفڈم سپیکر کے نمائندہ، احمدیہ سکولوں کے سات پرنسپل، 4 مرکزی مبلغین، سات لوکل معلمین،76 غیر ازجماعت احباب اور 324؍ احباب جماعت نے شرکت کی۔ پروگرام میں کینیما کی 6 جماعتوں کی نمائندگی ہوئی۔

دعا ہے کہ اللہ تعالیٰ اس مسجد کو نمازیوں سے ہمیشہ آباد رکھے۔ آمین

(رپورٹ: عبدالہادی قریشی۔ نمائندہ روزنامہ الفضل لندن آن لائن)

پچھلا پڑھیں

الفضل آن لائن 3 جون 2021

اگلا پڑھیں

الفضل آن لائن 4 جون 2021