• 17 اپریل, 2024

نمازجنازہ حاضر و غائب

مکرم منیر احمد جاوید پرائیویٹ سیکرٹری یہ اطلاع دیتے ہیں کہ حضرت امیر المؤمنین خلیفة المسیح الخامس ایدہ اللہ تعالیٰ نے مؤرخہ 11؍ فروری 2023ء بروزہفتہ 12بجے دوپہر اپنے دفتر سے باہر تشریف لا کر ایک نماز جنازہ حاضر اور چند نماز جنازہ غائب پڑھائیں۔

نماز جناز ہ حاضر

مکرمہ آمنہ صدیقہ منان صاحبہ اہلیہ مکرم میاں عبد المنان صاحب (ارلز فیلڈ۔یوکے)

8؍فروری 2023ء کو 90سال کی عمر میں بقضائے الٰہی وفات پا گئیں۔ اِنَّا لِلّٰہِ وَ اِنَّاۤ اِلَیۡہِ رٰجِعُوۡنَ۔ مرحومہ حضرت مسیح موعود علیہ السلام کے صحابہ حضرت میاں عبد العزیز صاحب المعروف المغل رضی اللہ عنہ کی بیٹی اور حضرت میاں چراغ الدین صاحب رضی اللہ عنہ کی پوتی تھیں۔آپ اپنے شوہر اور بچوں کے ساتھ 1960ءکی دہائی میں یوکے آئیں اور Batterseaکی صدر لجنہ کے طورپر خدمت کی توفیق پائی۔ صوم وصلوٰۃ کی پابند، باقاعدگی سے تہجد ادا کرنے والی ایک نیک متقی اور دعا گو خاتون تھیں۔ غریب پروری، عزیزواقارب سے حسن سلوک اور مہمان نوازی آپ کے نمایاں اوصاف تھے۔ آپ نے حضرت مسیح موعود علیہ السلام کی ساری کتب پڑھنے کی توفیق پائی۔ جماعتی کتب اور رسائل کا بڑی باقاعدگی سے مطالعہ کرتی تھیں۔ خلافت سے والہانہ عقیدت اور احترام کا تعلق تھا۔ایم ٹی اے باقاعدگی سے دیکھتی تھیں۔آپ کو چار خلفاء کا دور دیکھنے کی توفیق ملی۔ مرحومہ موصیہ تھیں۔پسماندگان میں چار بیٹے، تین بیٹیاں اور بہت سے پوتے پوتیاں اور نواسے نواسیاں شامل ہیں۔

نماز جناز ہ غائب

-1مکرمہ رشیدہ سلمیٰ چوہدری صاحبہ اہلیہ مکرم رشید احمدچوہدری صاحب (کینیڈا)

28؍دسمبر2022ء کو 91سال کی عمر میں کینیڈا میں وفات پاگئیں۔ اِنَّا لِلّٰہِ وَ اِنَّاۤ اِلَیۡہِ رٰجِعُوۡنَ۔ مرحومہ حضرت مسیح موعود علیہ السلام کے صحابہ حضرت حاجی محمد امیر خان صاحب رضی اللہ عنہ اور حضرت اصغری بیگم صاحبہؓ کی نواسی تھیں۔ آپ کی والدہ مکرمہ حمیدہ بیگم صاحبہ حضرت میر محمد اسحاق صاحب رضی اللہ عنہ کی اہلیہ حضرت صالحہ بیگم صاحبہ رضی اللہ عنھا کی ماموں زاد اور پھوپھی زاد بہن تھیں۔مرحومہ صوم صلوٰۃ کی پابند،تہجد گزار،ملنسار، مہمان نواز،ایک نیک اور مخلص خاتون تھیں۔ خلافت اور جماعت سے والہانہ عشق تھا۔ تلاوت قرآن کریم میں نہ صرف باقاعدہ تھیں بلکہ احمدی اور غیر احمدی بچیوں کو بھی ناظرہ اور باترجمہ قرآن پڑھاتی رہیں۔ جماعتی کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصّہ لینے والی تھیں۔ کینیڈا میں طویل عرصہ تک صدر لجنہ سڈبری کے طور پر خدمت کی توفیق پائی۔ مرحومہ خدا کے فضل سے موصیہ تھیں۔

-2مکرم شیخ مظفر احمد صاحب ابن شیخ مشتاق احمد صاحب(دنیا پور )

28؍ جنوری 2023ء کو حرکت قلب بند ہونے سے84 سال کی عمر میں وفات پا گئے۔ اِنَّا لِلّٰہِ وَ اِنَّاۤ اِلَیۡہِ رٰجِعُوۡنَ۔ محکمہ تعلیم میں ملازمت کے دوران مذہبی منافرت کی بناء پر آپ کو ساتھی اساتذہ کی طرف سے شدید مخالفت کا سامنا رہا مگر آپ نے ہمیشہ ہمت، حوصلے اور دعا کے ساتھ ان مشکلات کا مقابلہ کیا۔ قومی اسمبلی کے فیصلے کے بعد جون 1976ء میں ان کے خاندان میں پہلی وفات ہوئی تو آپ نے شہر کے سرکردہ افراد سے مل کر احمدیوں کے علیحدہ قبرستان کے حصول کو ممکن بنایا جہاں اس میت کی تدفین ہوئی۔ حضرت مسیح موعود علیہ السلام کی کتب اور جماعتی اخبارات کا باقاعدگی سے مطالعہ کرتے۔ خلافت سے انتہائی عقیدت و احترام کا تعلق تھا۔ مرکزی مہمانوں، مربیان اورچندہ جات کی وصولی کے لئے آنے والے انسپکٹران کی بھر پور جذبے کے ساتھ خدمت کی توفیق پائی۔مسلسل کئی سال بڑی باقاعدگی کے ساتھ وقف عارضی کرتے رہےاور کئی بار سند خوشنودی حاصل کی۔ آپ نے مقامی سطح پرقائد مجلس اور زعیم انصار اللہ کے علاوہ ضلعی عاملہ میں بھی خدمت کی توفیق پائی۔ لمبا عرصہ امام الصلوٰۃ رہے۔ صوم وصلوٰۃ کے پابند، تہجد گزار،تلاوت قرآن کریم میں باقاعدہ، دعاگو، منکسر المزاج، حلیم طبع، ملنسار، زیرک اور صائب الرائے وجود تھے۔ بڑی بیٹی اور بیٹے کو قرآن مجید حفظ کروایا۔ اپنے پوتے پوتیوں اور دیگر بچوں کو باقاعدگی کے ساتھ قرآن مجید ناظرہ پڑھاتے رہے۔ مرحوم موصی تھے۔ پسماندگان میں پانچ بیٹے، دو بیٹیاں اور بہت سے پوتے پوتیاں اور نواسے نواسیاں شامل ہیں۔ آپ مکرم لئیق احمدمشتاق صاحب ( مبلغ انچارج سرینام جنوبی امریکہ) اورمکرم محمد ولید احمد صاحب مربی سلسلہ کے والد اور مکرم مظفر احمد خالد صاحب مربی سلسلہ کے سسر تھے۔

-3 مکرم ندیم احمد بھٹی صاحب (جرمنی )

10؍ نومبر 2022ء کو بقضائے الٰہی وفات پاگئے۔ اِنَّا لِلّٰہِ وَ اِنَّاۤ اِلَیۡہِ رٰجِعُوۡنَ۔ مرحوم بہت مخلص اور باوفا انسان تھے۔ نمازوں کیلئے مسجد میں جایا کرتے تھے۔ کوئی بھی جماعتی یا تنظیمی پروگرام ہوتاتو اپنے کام کا حرج کر کے بھی اُس میں شامل ہوتے۔ چندہ کی وصولی کیلئے احبابِ جماعت کے گھروں میں جایا کرتے تھے۔ تبلیغی کاموں میں بھی پیش پیش رہتے اور جب بھی کوئی تبلیغی پروگرام ہوتا تو جرمن مہمانوں کو ساتھ لے کر آتے۔ ضرورتمندوں کی مالی مدد بھی کیا کرتے تھے۔ مرحوم موصی تھے۔

-4مکرم ڈاکٹر دلدار احمد صاحب( آف فیصل آباد۔ حال کینیڈا)

5؍ دسمبر 2022ء کو87 سال کی عمر میں بقضائے الٰہی کینیڈا میں وفات پا گئے۔ اِنَّا لِلّٰہِ وَ اِنَّاۤ اِلَیۡہِ رٰجِعُوۡنَ۔ آپ ایک ماہر معالج تھے۔ ہومیو پیتھی کا گہرا مطالعہ اورآکوپنکچر اور الیکٹروہومیوپیتھک کا وسیع تجربہ تھا۔اللہ تعالیٰ نے تشخیصِ امراض کی گہری فراست بھی عطا کی ہوئی تھی۔ مرحوم بہت مہمان نواز اور ہر دِل عزیز انسان تھے۔ خلافت سے بے انتہا محبت و عشق تھا۔ تبلیغ کا انتہائی شوق تھا۔کلینک پر آنے والے اکثر مریضوں اور دوستوں کو تبلیغ کئے بغیر نہیں جانے دیتے تھے۔ 1974ء کے پُر آشوب زمانہ میں مرحوم کا کلینک انتہا پسند ملا ؤں نے نذرِ آتش کر دیاتھا۔ اس کے بعد گھر سے کلینک کا دوبارہ آغاز کیا۔ اللہ تعالیٰ نے اپنےفضل و کرم سےآپ کے کلینک اور رزق میں بے انتہا برکت عطا فرمائی۔ انہیں ہومیوپیتھک ادویات بنانے والی مشینیں بنا کر حضرت خلیفۃ المسیح الرابع رحمہ اللہ کی خدمت میں پیش کرنے کا موقع بھی ملا۔ جس پر حضور رحمہ اللہ نے اظہارِ خوشنودی کے طور پر فرمایا ‘‘ڈاکٹر صاحب کو اللہ تعالیٰ نے مختلف پُرزے جوڑ کر مشینیں بنانے کا عجیب ملکہ عطافرمایا ہے’’۔ مرحوم موصی تھے۔ پسماندگان میں ایک بیٹی اور تین بیٹے شامل ہیں۔

-5مکرمہ راشدہ وحید صاحبہ اہلیہ مکرم چوہدری عبد الوحید صاحب ایڈووکیٹ مرحوم لاہور(امریکہ)

23؍نومبر 2022ءکو بقضائے الٰہی 83سال کی عمر میں وفات پا گئیں۔ اِنَّا لِلّٰہِ وَ اِنَّاۤ اِلَیۡہِ رٰجِعُوۡنَ۔ بچپن ہی سے پنجوقتہ نمازوں کی پابند اور باقاعدگی سے قرآن کریم کی تلاوت کرنے والی تھیں۔ ہر کسی کا خیال رکھنے والی ایک مخلص ہمدرد خاتون تھیں۔ جماعتی خدمت میں پیش پیش رہتیں اور خلافت سے محبت کرنے والی تھیں۔ مرحومہ موصیہ تھیں۔ پسماندگان میں چار بچے شامل ہیں۔

-6مکرمہ نسیم ضیاء صاحبہ اہلیہ مکرم چوہدری ضیاء الدین صاحب ایڈووکیٹ مرحوم بہلولپوری (امریکہ)

16؍ جنوری 2023ء کو81 سال کی عمر میں بقضائے الٰہی امریکہ میں وفات پا گئیں۔ اِنَّا لِلّٰہِ وَ اِنَّاۤ اِلَیۡہِ رٰجِعُوۡنَ۔ آپ مکرم چوہدری صلاح الدین صاحب بہلولپوری(واقف زندگی ) کی بھابھی تھیں۔ صوم وصلوٰۃ کی پابند، تہجدگزار،خلافت کی شیدائی اور خاندان حضرت مسیح موعود علیہ السلام سے نہایت عقیدت رکھنے والی مخلص خاتون تھیں۔بہت غریب پرور اور مہمان نوازی میں اپنے سارے خاندان میں ایک مثالی نمونہ رکھتی تھیں۔ اپنی جماعت لاس اینجلس کی ہر دل عزیز خاتون تھیں۔پسماندگا ن میں تین بیٹیاں اور دو بیٹےشامل ہیں۔ آپ مکرم نسیم ملک صاحب (سیکرٹری انٹرنیشنل ہیومین رائٹس کمیٹی مقیم سویڈن ) کی نسبتی بہن تھیں۔

-7مکرم چوہدری محمد انور صاحب ابن مکرم نور محمد صاحب (سسکاٹون )

23؍نومبر2022ءکو ایک لمبی بیماری کے بعد 74 سال کی عمر میں وفات پا گئے۔ اِنَّا لِلّٰہِ وَ اِنَّاۤ اِلَیۡہِ رٰجِعُوۡنَ۔ مرحوم نے صدر جماعت سسکاٹون کے علاوہ مختلف شعبوں میں خدمت کی توفیق پائی۔ مالی قربانی میں پیش پیش رہتے تھے۔ صوم وصلوٰۃ کے پابند، غریب پرور، مہمان نواز، مرکزی مہمانوں سے نہایت محبت اور اخلاص سے پیش آنے والے، ضرورت مندوں کی مدد کرنے والے، خدمت خلق کے جذبہ سے سرشار ایک نیک، مخلص اور باوفا انسان تھے۔

-8مکرمہ قدسیہ فردوس صاحبہ اہلیہ مکرم ڈاکٹر عطاء اللہ مہر صاحب(ملتان )

9؍ جنوری 2023ء کوبقضائے الٰہی وفات پا گئیں۔ اِنَّا لِلّٰہِ وَ اِنَّاۤ اِلَیۡہِ رٰجِعُوۡنَ۔ آپ مکرم حکیم مہر دین صاحب درویش قادیان کی پوتی تھیں۔ خان پور میں صدر لجنہ کے طورپر خدمت کی توفیق پائی۔ آپ نے تین حج اور متعدد عمرے کرنے کی سعادت پائی۔ مرحومہ صوم وصلوٰۃ اور تلاوت قرآن کریم کی پابند اور باقاعدگی سے چندے ادا کرنے والی ایک نیک اور مخلص خاتون تھیں۔پسماندگان میں میاں کے علاوہ تین بیٹے اور ایک بیٹی شامل ہیں۔

-9مکرم ملک عطاء اللہ صاحب (جرمنی)

20؍دسمبر 2022ءکو بقضائے الٰہی وفات پاگئے۔ اِنَّا لِلّٰہِ وَ اِنَّاۤ اِلَیۡہِ رٰجِعُوۡنَ۔ آپ صوم وصلوٰۃ کے پابند، نیک مخلص اور خاموش طبع انسان تھے۔ آپ کا نظامِ جماعت سے بہت اچھا تعلق تھا اور عہدیداروں سے رابطہ میں رہتے تھے۔ باقاعدگی سے چندہ جات ادا کرتے تھے۔ وفات سے قبل پورے سال کا چندہ ادا کر دیا تھا۔ پسماندگان میں ایک بیٹا اور پانچ بیٹیاںشامل ہیں۔

-10عزیزہ لائبہ خان(جرمنی)

19؍ نومبر 2022ء کو 16 سال کی عمر میں وفات پاگئیں۔ اِنَّا لِلّٰہِ وَ اِنَّاۤ اِلَیۡہِ رٰجِعُوۡنَ۔ عزیزہ شوق سے حضورِ انور کی خدمت میں باقاعدگی سے خط لکھتی تھیں۔جماعتی پروگراموں میں بھی حصہ لیتی اور اگر کسی وجہ سے فیملی شامل نہ ہوتی تو ناراض ہوتیں کہ کیوں جماعتی پروگرام میں شامل نہیں ہوئے۔ نظمیں سننے کا بہت شوق تھا اور خود بھی خوش الحانی سے نظمیں پڑھتی تھیں۔پسماندگان میں والدین کے علاوہ ایک بھائی اور ایک بہن شامل ہیں۔

اللہ تعالیٰ تمام مرحومین سے مغفرت کا سلوک فرمائے اور انہیں اپنے پیاروں کے قرب میں جگہ دے۔ اللہ تعالیٰ ان کے لواحقین کو صبر جمیل عطا فرمائے اور ان کی خوبیوں کو زندہ رکھنے کی توفیق دے۔آمین

پچھلا پڑھیں

الفضل آن لائن 8 مارچ 2023

اگلا پڑھیں

ارشاد باری تعالیٰ