• 5 اگست, 2020

غرباء سے عاجزی اور خاکساری کا مظاہرہ کریں

حضرت خلیفۃ المسیح الخامس ایدہ اللہ تعالیٰ بنصرہ العزیز فرماتے ہیں:
اسوقت پھر بعض دفعہ ایسی عورتوں کوجن میں عاجزی نہیں ہوتی رعونت اور تکبر کا اظہار ہورہاہوتاہے یہ عاجزی نہیں ہے کہ امیروں سے تو عاجزی دکھادی اورغریبوں سے عاجزی نہیں ہوئی۔ اب بعض دفعہ یہ اظہار صرف بات چیت سے نہیں ہورہا ہوتا اب اگر غور کریں تو ایسی عورتوں کاپھریا ایسے مردوں کا دونوں اس میں شامل ہیں، آنکھوں سے بھی تکبر ٹپک رہا ہوتاہے۔ گردن پر فخر اور تکبر نظر آرہا ہوتا ہے یا چہرے پر تکبر کے آثار نظر آرہے ہو تے ہیں تومنہ سے جتنا مرضی کوئی کہے کہ میں تو بڑاعاجز انسان ہوں زبان حال سے یہ پتہ چل رہا ہوتا ہے کہ یہ غلط بیانی سے کام لے رہا ہے۔ اور کوئی عاجزی نہیں اس میں۔

تصنع اور بناوٹ سے بچیں

پھر گھروں میں مثلاً مثال ہے سجاوٹ کی کوئی چیز ہے پڑی ہوئی اس کی کوئی تعریف کر دیتا ہے تو بڑی عاجزی سے کہہ رہی ہوتی ہیں کہ سستی ہی ہے اور قیمت پوچھو تو پتہ چلتا ہے کہ صاف بناوٹ اور تصنّع سے کا م لیا جارہا ہوتا ہے۔ تو یہ بناوٹ کی باتیں نہیں ہو نی چاہیں احمدی معاشرہ ان سے بالکل پاک ہونا چاہیے حقیقی انکسار اور عاجزی دکھانی چاہے ہم تو ایک بہت بڑا مقصد لیکر کھڑے ہوئے ہیں اگر دنیا وی نام و نمود اور بناوٹ اور تصنّع کے چکر میں پڑ گئے۔ تو پھر ان اہم کاموں کو کون سر انجام دے گا جو ہمارے سپرد کئے گئے ہیں۔

اپنے اندرعاجزی پیدا کرنے کی خاص مہم چلائیں

اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم نے تو فرمایا ہے کہ:-جتنا بڑاتمہیں مقام ملے اتنے ہی نیچے جھکتے جاؤ اور اس کے نتیجے میں خدا تمہیں اتنا ہی اونچا کرتا چلا جائے گا تو ایمان کا تو یہ مقام ہے کہ اللہ کی ذات پرہی بھروسہ ہونا چاہیے نہ کہ بندوں پر اور جس شخص کو ہم نے اس زمانہ میں مانا اسکے سلسلہ بیعت میں شامل ہو کر اس کے ہر حکم کو بجا لانے کا ہم عہد کرتے ہیں۔ اس کا عمل تو عاجزی کی اس انتہا تک پہنچا ہوا ہے، کہ خدا نے بھی خوشنودی کا اظہار کرتے ہوئے فرمایا: تیری عاجزانہ راہیں اسے پسند آئیں۔

پس ہر احمدی کو عمومی طور پر اور عہدہ دار ان کو خصوصی طور پر میں یہ کہتا ہوں کہ عاجزی دکھائیں، عاجزی دکھائیں اورعاجزی کو اپنے اندر اور اپنی ممبرات اور اپنے ممبران کے اندر چاہے مرد ہوں یا عورتیں،پیدا کرنے کی خاص مہم چلائیں۔ اس سال اکثر جگہ ذیلی تنظیموں کے انتخابات ہو رہے ہیں آپ کابھی کل ہوگیا۔ تو اس خوبصورت خلق کی طرف بھی توجہ دیں اور نئے عزم کے ساتھ توجہ دیں۔ لوگوں سے دعائیں بھی لیں عاجزی دکھا کر اور اللہ تعالیٰ کی طرف سے مغفرت اور اجر عظیم کی ضمانت بھی لیں۔ پس دیکھیں خدا تعالیٰ تو کس کس طریقے سے اپنے بندوں کی بخشش کے سامان کر رہا ہے۔ کہ عاجزی دکھاؤ تب بھی تمہیں بخش دوں گا۔اب ہم ہی ہیں جوان باتوں کو نہ سمجھتے ہوئے ان سے دور بھاگ رہے ہیں۔

(سالانہ اجتماع لجنہ و ناصرات UK سے خطاب فرمودہ 19/اکتو بر 2003ء)

پچھلا پڑھیں

الفضل آن لائن 8 جولائی 2020

اگلا پڑھیں

Covid-19 عالمی اپڈیٹ 9 جولائی 2020ء