• 27 جنوری, 2023

کلمات فارسی از ملفوظات حضرت مسیح موعودؑ (قسط 2)

کلمات فارسی از ملفوظات حضرت مسیح موعودؑ
قسط 2

ب

؏ بَرْکَرِیْمَاںْ کَارْھَا دُشْوَارْ نِیْست

ترجمہ:۔جوانمردوں کےلئے کوئی کام مشکل نہیں ہوتے۔

؎ بِزُہْد و وَرَعْ کُوْش وصِدْق وصَفَا
وَلِیْکِن مَیْفَزَائِے بَرْ مُصْطَفےٰ

ترجمہ:۔ ترکِ دنیا، پرہیز گاری اور صدق وصفاکے لئے ضرور کوشش کر مگر مصطفیﷺ (کے بتائے ہوئے طریقوں) سے تجاوز نہ کر۔

؎ بِدِلْ دَرْدِیْکِہْ دَارَمْ، اَزْبَرَائے طَالِبَانِ حَقْ
نِمِےْگَرْدَدْ بَیَاںْ، آںْ دَرْد، اَزْ تَقْرِیْرِ کُوْتَاہَمْ

ترجمہ:۔ طالبان حق کے لئے دل میں جودردمیں رکھتا ہوں۔وہ درد میری چھوٹی سی تقریرمیں بیان نہیں ہوسکتا۔

؏ بِبِیْن تَفَاوُتِ رَہْ اَزْ کُجَاسْت تَا بِہْ کُجَا

ترجمہ:۔ دیکھ !راستہ کا فرق کہاں سے کہاں تک ہے۔

؎ بَرْ خِلَافَتْ دِلَشْ بَسِےمَائِل
لِیْک بُوْبَکْرشُدْ دَرْمیاںْ حَائِل

ترجمہ:۔ خلافت پراس کا دل بہت مائل تھالیکن ابوبکراس میں حائل ہوگیا۔

؎ بِرُوْزِ ہُمَایُوْںْ وَ سَالِ سَعِیْد
بِتَارِیْخِ فَرُّخْ مِیَانِ دُوعِیْد

ترجمہ:۔ ایک مبارک زمانہ اور ایک مبارک سال میں دو عیدوں کے درمیان ایک مبارک تاریخ کو۔

؎ بِگُفْتْ اَحْوَالِ مَا بَرْقِ جَہَاں اَسْت
دَمِےْ پَیْدَا و دِیْگَرْ دَمْ نِہَاںْ اَسْت

ترجمہ:۔ اس نے کہا کہ ہماراحال بجلی کی طرح ہے ایک لمحہ دکھائی دیتی ہے اور دوسرے لمحہ غائب ہو جاتی ہے۔

؏ بَدَاںْ رَابِہْ نِیْکَاںْ بِہْ بَخْشَدْ کَرِیْم

ترجمہ:۔ وہ مہربان (خدا) اچھوں کے ساتھ بروں کو بھی بخش دیتا ہے۔

؎ بِخَرَام کِہ وَقْتِ تُو نَزْدِیْک رَسِیْد و پَائے
مُحَمَّدیَاںْ بَر مَنَارِ بُلَند تَرْ مُحکم اُفْتَاد

ترجمہ:۔ (ترجمہ از حضرت مسیح موعود علیہ السلام) اب ظہور کر اور نکل کہ تیرا وقت نزدیک آگیا اوراب وہ وقت آرہا ہے کہ محمدی گڑھے میں سے نکال لئے جاویں گے اور ایک بلنداور مضبوط مینار پر ان کا قدم پڑے گا۔

؎ بِہ تَشْوِیْق قِیَامَت مَانْد اِیْں تَشْوِیْق گَربِیْنِیْ
عِلاجِے نِیْسْت بَہْرِ دَفْعِ آں جُزْ حُسْنِ کِرْدَارِے

ترجمہ:۔ یہ پریشانی قیامت بن گئی ہے اگر تو دیکھے، اس کے دورکرنے کے لئے کوئی چارہ نہیں سوائے اچھے اعمال کے۔

؎ بِہِشْت آنْجَا کِہ آزَارِے نَہ بَاشَدْ
کَسے رَا بَا کَسے کَارِے نَہ بَاشَدْ

ترجمہ:۔ بہشت ایسی جگہ ہے جہاں کوئی دکھ نہ ہوکسی کوکسی سے کچھ کام نہ ہو۔

؏ بَرْگَرْدَنِ اُوْ بِمَانْد بَرْمَا بِگُذَشْت

ترجمہ:۔ (وہ ظلم) اس کی گردن پر رہا اور ہم پر سے گذر گیا۔

؎ بَارَاں کِہْ دَرْلَطَافَتِ طَبْعَشْ دَرِیْغْ نِیْسْت
دَرْ بَاغْ لَالِہْ رُوْیَدْ و دَرْ شُوْرِہْ بُوْم خَسْ

ترجمہ:۔ بارش جس کی پاکیزہ فطرت میں کوئی بخل نہیں وہ باغ میں تو پھول اگاتی ہے اور شورہ زمین میں گھانس پھونس۔

؎ بَارَاں کِہْ دَرْلَطَافَتِ طَبْعَشْ خِلَافْ نِیْسْت
دَرْ بَاغْ لَالِہْ رُوْیَدْ و دَرْشُوْرِہْ بُوْم خَسْ

ترجمہ:۔ بارش جس کی پاکیزہ فطرت میں کوئی ناموافقت نہیں وہ باغ میں تو پھول اگاتی ہے اور شورہ زمین میں گھانس پھونس۔

؏ بَدْنَامْ کُنَنْدِہْ نِکُوْنَامِےْ چَنْد

ترجمہ:۔ چند نیک نام اشخاص کو بدنام کرنے والا۔

؏ بَامُسَلْمَاں اَللہ اَللہ بَاہندو رَام رَام

ترجمہ:۔ مسلمان کے ساتھ اللہ اللہ اورہندوکے ساتھ رام رام۔

؎ بَا خِوْیْشْتَنْ چِہْ کَرْدِیْ کِہْ بِمَا کُنِیْ نَظِیْرِیْ
حَقَّا کِہْ وَاجَبْ آیَدْ زِ تُو اِحْتِرَازْ کَرْدَنْ

ترجمہ:۔ تو نے اپنوں سے کون سا اچھا سلوک کیا ہے کہ ہم سے بھی کرے گا بخدا تجھ سے بچ رہنا لازم ہے۔

؎ بِہْ مَنْزِلِ جَانَاںْ رَسَدْ ھَمَاںْ مَرْدِےْ
کِہْ ہَمِہْ دَمْ دَرْ تَلَاشِ اُوْ دَوَاںْ بَاشَدْ

ترجمہ:۔ محبوب کی بارگاہ میں وہی شخص پہنچ سکتا ہے جو ہر لمحہ اس کی تلاش میں لگا رہے۔

؎بِجُزْ اَسِیْرِیِ عِشْقِ رُخَشْ رَھَائِیْ نِیْست
بِدَرْدِ اُوْ ھَمِہْ اَمْرَاضْ رَا دَوَا بَاشَدْ

ترجمہ:۔ اس کے چہرہ کے عشق کی قید کے سوا کوئی آزادی نہیں او ر اس کا درد ہی سب بیماریوں کا علاج ہے۔

؎ بِسُوْزَدْ آنْکِہْ نَہْ سُوْزَدْ بِصِدْق دَرْرَہِ یَارْ
بِمِیْرَدْ آنْکِہْ گُرِیْزَنْدِہْ اَزْ فَنَا بَاشَدْ

ترجمہ:۔ خدا کرے وہ جل جائے جودوست کی راہ میں نہیں جلتا خدا کرے وہ مر جائے جو فنا سے بھاگتا ہے۔

؎ بِرَاہِ یَارِ عَزِیْز اَزْ بَلَا نَہْ پَرْھِیْزَدْ
اَگَرْچِہْ دَرْ رَہِ آںْ یَارْ اَژْدَھَا بَاشَدْ

ترجمہ:۔ اس عزت والے دوست کی راہ میں وہ کسی بلا سے نہیں ڈرتا خواہ اس یار کے راستے میں اژدہا بیٹھا ہو۔

؎بِدَوْلَتِ دُوجَہَاں سَرْفُرُوْ نِمِیْ آرَنْد
بِعِشْقِ یَار ْدِلِ زَارِ شَاںْ دُو تَا بَاشَدْ

ترجمہ:۔ دونوں جہان کی دولت کی طرف بھی یہ لوگ توجہ نہیں کرتے ان کادردمند دل محبوب کے عشق میں چور رہتا ہے۔

؎ بِیْآمَدَمْ کِہْ رَہِ صِدْق رَا دَرَخْشَانَمْ
بِدِلْسِتَاںْ بَرَمْ آنْرَا کِہْ پَارْسَا بَاشَدْ

ترجمہ:۔ میں اس لئے آیا ہوں کہ صدق کی راہ کو روشن کروں اور دلبر کے پاس اسے لے چلوں جو نیک وپارسا ہے۔

؎ بِنِگَرْکِہْ خُوْنِ نَاحَقِّ پَرْوَانِہْ شَمْعِ رَا
چَنْدَاں اَمَاں نَدَادْ کِہْ شَبْ رَا سَحَرْکُنَدْ

ترجمہ:۔ دیکھئے پروانہ کے خونِ ناحق نے شمع کو اتنی مہلت نہ دی کہ رات کو صبح میں بدل لے۔

؏ بَنِیْ آدَمْ اَعْضَائے یِکْ دِیْگَرْاَنْد

ترجمہ:۔ انسان ایک دوسرے کے اعضاء ہیں۔

؏ بِہْ زِیْرِسِلْسِلِہْ رَفْتَنْ طَرِیْقِ عَیَّارِیْ اَسْت۔

ترجمہ:۔ زلفوں کے سائے میں آنا چالاکی کا طریقہ ہے۔

پ

؏ پَیْدَا اَسْتْ نِدَا رَا کِہْ بُلَنْد ہَسْتْ جَنَابَت

ترجمہ:۔ آواز سے ظاہر ہے کہ تیری بارگاہ بہت بلند ہے۔

؏ پَسْ اَزْآنْکِہْ مَنْ نَہْ مَانَمْ بِچِہْ کَارْخَواہِی آمَدْ

ترجمہ:۔ اس کے بعد جبکہ میں زندہ نہ رہوں گاتوپھرتوکس کام کے لئے آئے گا۔

؏ پَرَاگَنْدِہْ رُوْزِیْ پَرَاگَنْدِہْ دِلْ

(مثل)

ترجمہ:۔ بےکار اور مفلس ہمیشہ پریشان رہتاہے۔

ت

؏ تُخْم تَاثِیْر صُحْبَت رَا اَثَر

ترجمہ:۔ نطفہ اور صحبت کا اثر ضرور ہوتا ہے۔

؎ تُو کَارِ زَمِیْں رَا نِکُو سَاخْـتِیْ
کِہْ بَا آسِمَاںْ نِیْز پَرْدَاخْتِی

ترجمہ:۔ کیا تو نے زمینی کاموں کو درست کرلیا ہے کہ آسمانی کاموں کی طرف بھی متوجہ ہوگیا ہے۔

؏ تُرَا کَشْتِی آوَرْد و مَا رَا خُدا

ترجمہ:۔ تجھے کشتی لے آئی اور ہمیں خدا۔

؏ تَاتَرْیَاقْ اَزْعِرَاقْ آوَرْدِہْ شَوَدْ

ترجمہ:۔ جب تک عراق سے تریاق لایاجائے

؎ تَا تَرْیَاقْ اَزْعِرَاقْ آوَرْدِہْ شَوَدْ
مَارْ گَزِیْدِہْ مُرْدِہْ شَوَدْ

ترجمہ:۔ جب تک عراق سےتریاق لایاجائے گاسانپ کا ڈسا ہوا مردہ ہوجائے گا۔

؏ تَوْبِہْ فَرْمَایَاںْ چِرَاخُوْد تَوْبِہْ کَمْتَرْ مِیْکُنَنْد

ترجمہ:۔ توبہ کاحکم دینےوالے خودتوبہ کم کیوں کرتے ہیں۔

؎ تَمَتُّعْ زِہَرْ گُوْشَۂِ یَافْتم
زِہَرْ خَرْمَنِے خُوْشَۂِ یَافْتَمْ

ترجمہ:۔ میں نے دور دراز ملکوں سےبھی فائدہ اٹھایا اور ہر کھلیان سے خوشہ لیا۔

؎ تَرْسَمْ نَہْ رَسِیْ بِہْ کَعْبِہْ اَےْ اَعْرَابِی
کِیْںْ رَاہْ کِہْ تُو مِیْرَوِیْ بِتُرکِسْتَانْ اَسْت

ترجمہ:۔ اے (عرب کے) بدو مجھے خدشہ ہے کہ تو کعبہ تک نہیں پہنچے گا کیونکہ جس راستے پر تو چل رہا ہے وہ تو ترکستان کو جاتا ہے۔

؏ تَا نَبَاشَدْ چِیْزَ کِےْ مَرْدُمْ نَہْ گُوْیَنْدْ چِیْزہَا

(ضرب المثل)

ترجمہ:۔ جب تک کچھ نہ کچھ نہ ہو لوگ باتیں نہیں بناتے۔

ج

؏ جُوْیَنْدِہْ یَابَنْدِہْ اَسْت

ترجمہ:۔ جو کوشش کرتا ہے وہ پالیتا ہے۔

؏ جُزْ بِخَلْوَتْ گَاہِ حَقْ آرَامْ نِیْسْت

ترجمہ:۔ حق (خداتعالیٰ) کی خلوت گاہ کے سوا کہیں راحت نہیں ہے۔

؎ جَانْ و دِلَمْ فِدَائِےْ جَمَالِ مُحَمَّدْ اَسْت
خَاکَمْ نِثَارِ کُوْچَۂِ آلِ مُحَمَّدْ اَسْت

ترجمہ:۔ میری جان ودل محمدﷺ کےجمال پرفداہیں اورمیری خاک آلِ محمد ﷺ کے کوچہ پر قربان ہے۔

(محمود احمد طلحہ۔ مربی سلسلہ و استاد جامعہ احمدیہ یو کے)

پچھلا پڑھیں

اعلان دعا

اگلا پڑھیں

الفضل آن لائن 11 مئی 2022