• 28 جنوری, 2023

جامعہ احمدیہ تنزانیہ میں گریجویشن

اللہ تعالیٰ کے فضل سے جامعہ احمدیہ تنزانیہ میں موٴرخہ 5؍دسمبر 2022ء بروز سوموار گریجویشن کی تقریب کا انعقاد ہوا جس میں امسال فارغ التحصیل ہونے والے طلباء میں اسناد تقسیم کی گئیں۔ اسی طرح تعلیمی سال کے دوران نمایاں کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے طلباء میں انعامات بھی تقسیم کیے گئے۔

گریجویشن کی اس تقریب کے مہمان خصوصی مکرم طاہر محمود چوہدری صاحب (امیر و مشنری انچارج) تھے۔ عزیزم حسین عمر Mpenda صاحب نے تلاوت قرآن کریم پیش کی اور عزیزم عثمان Libuyi صاحب نے نظم پڑھ کر سنائی۔ اس کے بعد مکرم عزیز احمد شہزاد صاحب (سٹاف سیکرٹری) نے بزبان اردو سالانہ کارگزاری رپورٹ پیش کی، جبکہ سواحیلی رپورٹ مکرم معلم شمعون جمعہ صاحب (استاد جامعہ )نے پیش کی۔ اس کے بعد پروجیکٹر کی مدد سے دوران سال مختلف events کی تصویری جھلکیاں دکھائی گئیں۔ مجلس علمی کے زیر اہتمام عربی، اردو اور انگریزی زبان میں تقریری مقابلوں میں اول پوزیشن حاصل کرنے والے طلباء کو اس تقریب میں تقریر کرنے کا موقع دیا گیا۔ اس کے بعد انعامات تقسیم ہوئے۔ مکرم مہمان خصوصی صاحب نے امسال فارغ التحصیل طلباءکو اسناد اور قرآن کریم کا تحفہ پیش کیا۔ اس کے علاوہ علمی مقابلہ جات میں نمایاں پوزیشن حاصل کرنے والے طلباء کو انعامات دیے گئے۔ کارکنان، اساتذہ اور مہمانان کی خدمت میں بھی تحائف پیش کیے گئے۔امسال جامعہ سے فارغ التحصیل ہونے والے 9 طلباء میں تنزانیہ، کینیا اور برونڈی کے طلبہ شامل ہیں جن کے نام درج ذیل ہیں:

عزیزم نعیم MULEMBO
عزیزم یقین رجب SANDALI
عزیزم حسین سعدی
عزیزم محمود موسیٰ
عزیزم شکور صادق
عزیزم عیدی قاسم MGELEKA
عزیزم عبد الکریم NZOKWAMANSENGA
عزیزم حسن فاراج NAKUCHIMA
عزیزم رجب LUSEZA

مکرم مہمانِ خصوصی صاحب نے نصائح میں طلباء جامعہ کو وقفِ زندگی کا عہد اور اس کا اصل مقصد ہمیشہ اپنے سامنے رکھنے کی طرف توجہ دلائی۔ آپ نے فرمایا کہ معلم سلسلہ کو میدانِ عمل میں احبابِ جماعت کیلئے ایک نمونہ بن کر رہنا چاہئے اور ہر وقت ان کی تربیت کی کوشش کرنی چاہئے۔

اس تقریب میں مکرم ڈاکٹر فضل الرحمن صاحب (انچارج احمدیہ پولی کلینک موروگورو)، مکرم کریم الدین شمس صاحب (ریجنل مشنری) اور دیگر معزز مہمانان نے بھی شرکت کی۔ تقریب کے آخر میں خاکسار (پرنسپل جامعہ) نے مہمانان کی آمد پر اظہار تشکر کیا اور مکرم مہمانِ خصوصی صاحب نے دعا کروائی۔اس تقریب کا اہتمام بعد از نماز مغرب و عشاء جامعہ کے ہال میں کیا گیا۔ طلباء جامعہ نے خصوصی وقارعمل کرکے تزئین و آرائش اور تیاری اسٹیج وغیرہ کے امور سر انجام دیے گئے۔تقریب کے اختتام کے بعد تمام حاضرین کی خدمت میں عشائیہ پیش کیا گیا۔

قارئین الفضل کی خدمت میں جامعہ احمدیہ تنزانیہ کے تعلیمی سال 2022ء کی کارگزاری رپورٹ مختصراً پیش ہے:

جامعہ احمدیہ تنزانیہ کا آغاز 1984ء میں ہوا۔ اِس وقت جامعہ موروگورو ریجن کے علاقہ Kihondaمیں واقع ہے۔ جامعہ کی تعلیم کااصل محور قرآنِ کریم ہے اور دیگر تمام علوم اس کی شاخیں ہیں۔ان تدریسی مضامین میں تجویداورناظرہ قرآن مجید، ترجمہ اور تفسیر القرآن، حدیث، فقہ، کلام، موازنہ، حساب، سواحیلی ا ور تاریخ و سیرت شامل ہیں۔ نیز طلبہ کو عربی، اردو اور انگریزی زبانیں بھی پڑھائی جاتی ہے۔ دور جدید کے تقاضوں کو مد نظر رکھتے ہوئے طلبہ کو کمپیوٹر بھی سکھایا جاتا ہے اور آخری سال کے طلباء ایک ریسرچ پیپر بھی لکھتے ہیں۔ جامعہ کا تعلیمی سال دو سمسٹر پر مشتمل ہے اور دونوں سمیسٹرز کے اختتام پر باقاعدہ ہر مضمون کا امتحان لیا جاتا ہےاور دونوں سمسٹر کی مجموعی کارکردگی پر سالانہ رزلٹ بنایا جاتا ہے۔جامعہ احمدیہ تنزانیہ میں مشرقی افریقہ کے بیشتر ممالک کے طلباء تحصیل علم کے لیے آتے ہیں، جن میں تنزانیہ کے ساتھ ساتھ ہمسایہ ممالک کینیا، ملاوی، کانگو کنشاسا اور برونڈی شامل ہیں۔

جامعہ احمدیہ تنزانیہ سے ہر سال بعض طلباء کا جامعہ احمدیہ انٹرنیشنل گھانا کیلئے انتخاب کیا جاتا ہے۔ امسال بھی مندرجہ ذیل 3 طلباء کا انتخاب کیا گیا اور بعد از منظوری وہ گھانا تشریف لے گئے۔

عزیزم عیدی تمیم
عزیزم حماد سالوم Lengipaa
عزیزم صالح رجب Makubana

جامعہ ایک تعلیمی درسگاہ ہونے کے ساتھ ساتھ ایک تربیتی درس گاہ بھی ہے۔ درسی تعلیم کے ساتھ ساتھ دیگر تربیتی پروگرامز تشکیل دیے جاتے ہیں۔ جن میں خطبات جمعہ حضور انور ایدہ اللہ تعالیٰ بنصرہ العزیزبنیادی اہمیت کے حامل ہیں۔ تمام طلباء جمعۃ المبارک کو براہِ راست خطبہ سواحیلی زبان میں سنتے ہیں۔اور ہر ہفتہ کو بعد نماز مغرب و عشاء اردو زبان میں خطبہ سنتے ہیں۔ دیگر پروگرامز میں دُروس، جلسہ جات، ٹیوٹوریل سیشن، تربیتی مجالس اور لیکچرز شامل ہیں۔

تعلیمی میدان کے ساتھ ساتھ ہم نصابی سرگرمیاں بھی جامعہ کی روزمرہ کی روٹین کا حصہ ہیں۔بعد نماز عصر کھیل کا وقت مختص ہے۔ امسال سالانہ ورزشی مقابلہ جات مؤرخہ 2 اور 3؍نومبر 2022ء کو کروائے گئے۔ جن میں 6 اجتماعی مقابلہ جات اور11 انفرادی مقابلہ جات مثلاً دوڑ، لانگ جمپ، ہائی جمپ، پنجہ آزمائی اور نشانہ غلیل وغیرہ اور سٹاف جامعہ کے 4 مقابلہ جات شامل تھے۔امسال میروڈبہ کا نیا کھیل مقابلہ جات میں شامل کیا گیااور سٹاف جامعہ کے مقابلہ جات میں نشانہ غلیل کے مقابلہ کا اضافہ ہوا۔اساتذہ و طلباء کی سیر و تفریح کے لیے SUA یونیورسٹی موروگورو میں جامعہ کی پکنک ہوئی جس میں ملک بھر سے تشریف لائے ہوئے مبلغین کرام نے بھی شرکت کی۔ امسال جامعہ احمدیہ کے سٹاف میں ایک استاد کا اضافہ ہوا۔

علمی مقابلہ جات بھی جامعہ کی روٹین کا حصہ ہیں۔ امسال 11 علمی مقابلہ جات کروائے گئے جن میں تلاوت، نظم، اذان، تقاریر، حفظ ادعیۃ وغیرہ کے مقابلہ جات شامل ہیں۔ امسال پیغام رسانی کے مقابلہ کا اضافہ کیا گیا۔

مالی قربانی کے میدان میں بھی جامعہ کو حصہ لینے کا موقع ملا۔ جامعہ نے اپنا سالانہ بجٹ (جولائی 2021ء تا جون 2022ء) مکمل کیا۔ نیز وعدہ جات تحریک جدید اور وقف جدید کو بھی مکمل کیا۔ الحمد للّٰہ

شعبہ تبلیغ میں جامعہ بھر پور حصہ لیتا ہے۔ امسال جامعہ نے 41 تبلیغ ڈے منائے، SABA SABA نامی اتوار بازار میں26 مرتبہ بک سٹال لگائے۔اسی طرح رمضان کے بابرکت مہینے میں روزانہ کی بنیادپر تدریس کے بعد تبلیغ کا پروگرام بنایا گیا جس میں طلباء موروگورو شہر کے قریب مختلف علاقوں میں جا کر جماعت کا پیغام پہنچاتے اور کتب فروخت کرتے۔اسی طرح ماہِ اگست میں NANE NANE کے مقام پر لگاتار 9 دن جماعتی بک سٹال بھی لگا یا گیا۔

ان تمام سرگرمیوں سے تقریباً 5 ہزار جماعتی کتب فروخت ہوئیں جن کی کل مالیت 6,342,700 تنزانین شلنگ ہے۔ان کتب میں 39 سواحیلی ترجمۃ القرآن بھی شامل ہیں۔نیز 15000 سے زائد پمفلٹس تقسیم کیے گئےاور مجموعی طور پر 26000 سے زائد احباب تک جماعت کا پیغام پہنچا۔

وقار عمل کے شعبہ میں بھی جامعہ کو خدمت کی توفیق ملی۔ جامعہ کے ماحول کی صفائی، راستوں کو صاف رکھنا، غیر ضروری جڑی بوٹیوں کو تلف کرنا اور سکول اور مسجد سے منسلکہ احاطہ کی صفائی وغیرہ شامل ہے۔اسی طرح سیکنڈری سکول کی تعمیر میں بھی طلباء جامعہ نے وقار عمل کرکے معاونت کی۔ جامعہ کے احاطہ میں اپنی مدد آپ کے تحت پھل دار پودوں کے باغات اور سبزیوں کی کیاریاں بھی لگائی گئی ہیں۔یہ سبزیاں روزمرہ کے استعمال میں لائی بھی جاتی ہیں۔ امسال جو وقار عمل کیے گئے ان کی تعداد 170 ہے اور اس کی مدد سے اندازاً 4 ملین شلنگ کی بچت ہوئی۔نیز زراعت کی مد میں 12 لاکھ شلنگ سے زائد رقم کی بچت ہوئی۔

خدمت خلق کے شعبہ میں جامعہ نے بھی اپنی استطاعت کے مطابق حصہ ڈالا۔ سولر واٹر پمپ کے ذریعے اہل علاقہ پانی کی سہولت سے فائدہ اٹھاتے ہیں۔امسال عید الفطر کے موقعہ پر جامعہ کو 110 گھرانوں میں راشن تقسیم کرنے کا موقع ملا۔ اس تقریب میں ریجنل کمشنر صاحب کو بطور مہمان مدعو کیا گیا۔ انہوں نے بہت خوشنودی کا اظہار کیا اور دیگر مصروفیات کے باعث شامل نہ ہوسکنے کی وجہ سے ڈسٹرکٹ کمشنر مکرم ALBERT MSANDO صاحب موروگورو کو اپنا نمائندہ بنا کر بھجوایا۔ مکرم ڈسٹرکٹ کمشنر صاحب نے اپنے خطاب میں جماعت کی خدمات کو سراہا۔اس موقع پر انہیں قرآن کریم (سواحیلی ترجمہ) کا تحفہ بھی پیش کیا گیا۔

عیدالاضحی کے موقع پر بھی جامعہ میں 23 بکرے اور ایک گائے، اللہ تعالیٰ کی راہ میں قربان کی گئی۔اورقربانی کے گوشت کے تقریباً 180 تحائف تقسیم کیے گئے۔ جن میں اہل علاقہ،سٹاف و کارکنان جامعہ، غرباء و مساکین اور بعض سرکاری و غیر سرکاری محکمہ جات کے سربراہان اور ان کا سٹاف شامل ہیں۔ ان ادراہ جات میں ریجنل کمشنر، ڈسٹرکٹ کمشنر، میئر، ریجنل پولیس کمشنر اور ریجنل کمشنر امیگریشن وغیرہ کے محکمہ جات شامل ہیں۔ نیز بعض وزارتوں اور وزراءاور ان کے سٹاف کو بھی جامعہ کے زیر اہتمام قربانی کے گوشت کا تحفہ بھجوایا گیا۔ جن میں درج ذیل وزارتیں شامل ہیں:

Prime Minister of Tanzania
Spokesperson of Govt. of Tanzania
Minister For Labour
Minister For Good Governance
Minister For Human Resources
Minister For Parliamentary Affairs
Deputy Permanent Secretary For Sports and Art
Deputy Director To The Inter-governmental Organizations
Secretary To The Ministry Of Parliamentary Affairs

جامعہ کی انتظامیہ، قریب ہی قائم احمدیہ پری اینڈ پرائمری سکول میں بھی خدمت بجا لاتی ہے۔ امسال احمدیہ سکول کی جماعت ہفتم کارزلٹ بہت اچھا رہا۔کل 22 طلبہ نے امتحان میں حصہ لیا۔ان میں سے 4 کا (A)گریڈ اور 18 کا (B)گریڈ آیا۔ یہ دوسری کلاس ہےجو اس سکول سے پاس ہوئی ہے۔

اسی طرح اساتذہ و طلباء جامعہ کو MTA اَمری عبیدی سٹوڈیو تنزانیہ میں مختلف پروگراموں کی تیاری سلسلے میں ریکارڈنگ کروانے کابھی موقع ملا۔ نیز جامعہ کو ملک بھر سے تشریف لائے ہوئے مبلغین کرام کی میٹنگ کی میزبانی کی سعادت بھی حاصل ہوئی۔

امسال جامعہ کے احاطہ میں واقع ’’مسجد مسرور‘‘ کی رینوویشن کا کام ہوا۔ مسجد میں نیا پینٹ کیا گیااور نیا قالین بھی بچھایا گیا۔ مسجد کی طرف جانے والے راستے کے دونوں اطراف ROAD EDGES لگائے گئے اور ان پر رنگ و روغن کیا گیا۔جامعہ احمدیہ کی نئی لائبریری بھی تعمیر ہوئی۔ سپرنٹنڈنٹ ہوسٹل کے لیے نیا دفتر تعمیر ہوا۔میس و دیگر ضروریات کے لیے 16 میز اور 100 کرسیوں کا اضافہ ہوا۔ جامعہ کے احاطہ میں واقع ایک مشن ہاؤس کی رینوویشن کی گئی اوراس میں ایک نئے کمرے کا اضافہ کیا گیا۔اسی طرح ایک اور مشن ہاؤس میں رنگ و روغن بھی کیا گیا۔ جامعہ کے لان میں نئی سولر لائٹیں لگائی گئیں۔

احمدیہ پری اینڈ پرائمری سکول میں ایک وسیع ’’مسرور ہال‘‘ کا افتتاح بھی ہوا۔ جامعہ اور سکول کے احاطہ میں سڑک کے دونوں اطراف 70 سےزائد ناریل کے پودے بھی لگائے گئے۔ اسی سکول کے احاطہ میں امسال احمدیہ سیکنڈری سکول کی تعمیر کا آغاز ہوا۔جس میں پہلے مرحلہ میں 10کمروں کی تعمیر پر کام شروع ہوا۔

دورانِ سال جامعہ احمدیہ کے نصاب پر نظر ثانی کی گئی۔اور تمام اساتذہ کے مشورہ سے ہر مضمون میں درسی کتب کا اضافہ کیا گیایہ نصاب جنوری 2023ء سے نافذ العمل ہوگا۔

جلسہ سالانہ تنزانیہ 2022ء کےموقعہ پر انتظامیہ جامعہ کو نمائش کی تیاری کا کام سونپا گیا۔ اساتذہ جامعہ نے محنت اور لگن سے اس نمائش کو تیار کیا۔اس نمائش میں پہلی مرتبہ ایک حصہ جامعہ احمدیہ تنزانیہ سے متعلق مختلف اُمور اور شعبہ جات کے تعارف کیلئے مختص کیا گیا تھا۔ اس حصہ کو بھی زائرین نے بہت پسند کیا۔

اللہ تعالیٰ سےدعا ہے کہ وہ جامعہ احمدیہ تنزانیہ کو اپنے خاص فضلوں سے نوازے اور اس ادارے سے فارغ التحصیل ہوکر میدان عمل میں خدمت بجا لانے والوں کو حضرت خلیفۃ المسیح ایدہ اللہ تعالیٰ بنصرہ العزیزکی توقعات پر کما حقہ پورا اترنے کی توفیق عطا فرمائے۔آمین

(عابد محمود بھٹی۔ نمائندہ الفضل آن لائن تنزانیہ)

پچھلا پڑھیں

الفضل آن لائن 16 جنوری 2023

اگلا پڑھیں

ارشاد باری تعالی