• 4 فروری, 2023

تُو جو میرا بنے تو بات بنے

تُو جو میرا بنے تو بات بنے
(کلام حضرت خلیفة المسیح الرابعؒ)

تو مرے دل کی شش جہات بنے
اِک نئی میری کائنات بنے

سب جو تیرا ہے لاکھ ہو میرا
تُو جو میرا بنے تو بات بنے

نیچ ہے تجھ سے منقطع ہر ذات
جس کا تُو ہو اُسی کی ذات بنے

عالمِ رنگ و بو کے گل بوٹے
خواب ٹھہرے، توہمات بنے

سادہ باتوں کا بھی ملا نہ جواب
سب سوالات مظلمات بنے

یہ شب و روز و ماہ و سال تمام
کیسے پیمانہ صفات بنے؟

ہوئی میزانِ ہفتہ کب آغاز؟
کیسے دن رات سات سات بنے؟

عالم حیرتی کے مندر میں
کبھی بت مظہرِ صفات بنے

کبھی مخلوق ہو گئی ہمہ اُوست
آتش و آب، عین ذات بنے

کتنے منصور چڑھ گئے سر دار
کتنے نعرے تعلیات بنے

(کلام طاہر ایڈیشن 2004 صفحہ41-42)

پچھلا پڑھیں

الفضل آن لائن 28 نومبر 2022

اگلا پڑھیں

سیّدنا حضرت امیر المؤمنین کا دورہ امریکہ 2022ء (قسط 19۔ حصہ اول)